سٹیل ملز ملازمین کے پنشن فنڈز میں7.52 ارب کی مالی بدعنوانی کا کیس نیب کو ارسال

سٹیل ملز ملازمین کے پنشن فنڈز میں7.52 ارب کی مالی بدعنوانی کا کیس نیب کو ارسال

اسلام آباد (آن لائن)سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انڈسٹریز اینڈ پیداور نے پاکستان سٹیل ملز ملازمین کے پنشن فنڈز میں 7.52 ارب رو پے کی مالی بدعنوانی کا مقدمہ نیب کو بھیجتے ہوئے چیئرمین نیب کو غریب ملازمین کو گریجوایٹی فنڈ کے تحت بقایاجات کی جلد ادائیگی کیلئے فنڈز کی ریکوری جلد یقینی بنانے کی سفارش کر دی۔سیکرٹری وزارت پیداور نے کمیٹی کو بتایا ملازمین کے پنشن فنڈز کا ناجائز استعمال کرنیوالوں میں چیئر مین سٹیل ملز آفتاب مبین شیخ کے علاوہ دیگر ملزموں میں عبدالعزیز میمن ،محمد منصور شریف اعوان ،ثمین اصغر،ابصار نبی وغیرہ شامل تھے جنہوں نے 2009 میں مذکورہ فنڈز کا ناجائز استعمال کیا اور اپنی عیاشیوں پر ساڑھے سات ارب روپے خرچ کردیئے جن میں گریجوایٹی فنڈز کے 3ارب61کروڑ جبکہ فنڈز کے 3ارب92کروڑ روپے شامل ہیں، کمیٹی نے متفقہ طور پر ریفرنس نیب کو بھیجنے کی ہدایت کر دی ۔ قائمہ کمیٹی کا اجلاس سینیٹر ہدایت اللہ کی زیر صدارت ہواجس میں سینیٹر زمیاں عتیق، کلثوم پرویز، خالدہ پروین، نجم الحسن اور خانزادہ خان نے شرکت کی،ایم کیو ایم کے میاں عتیق نے کہا ریفرنس کی جلد کارروائی کیلئے وہ آج نیب چیئرمین کی کھلی کچہری میں جاکر انصاف کی بھیک ما نگیں گے کیونکہ افسران پر اعتبار نہیں کیا جاسکتا ،وہ اس ریفرنس کو مکمل فالو کریں گے تاکہ ملزموں کو عبرت کا نشان بنایا جاسکے۔قائمہ کمیٹی کو ایم ڈی یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن نے تمام معاملات پربریفنگ دی اور بتایا ادارہ روزانہ 14ملین روپے کے خسارے میں جارہا ہے،ملک بھر میں5327 یوٹیلٹی سٹورز ہیں جن میں 13451 ملازمین کام کرتے ہیں، گزشتہ سال سیل64ارب روپے تھی جس میں حکومت نے گزشتہ سال4ارب30کروڑ روپے کی سبسڈی دی تھی اور ہر سال حکومت کو1ارب 20کروڑ روپے سے زائد سیلز ٹیکس کی مد میں رقم دیتے ہیں ، حکومت یوٹیلٹی سٹورز کو ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دے کیونکہ یہ این جی اوز ادارہ ہے جو عوام کی فلاح وبہبود کیلئے قائم کیا گیا تھا۔ ہر سال یوٹیلٹی سٹو ر ز میں20کروڑ روپے کا سامان ضائع ہوجاتا ہے جس کے بعد ورکنگ کیپیٹل 640 ملین سے کم ہوکر130 روپے رہ گیا ہے۔سینیٹر میاں عتیق نے کہا یوٹیلٹی سٹورز کو تباہ کرنے اور خسارے میں بدلنے والے افسران خود جہاز خرید رہے ہیں، کرپٹ مافیا نے ادارہ تباہ کردیا ہے اور اب امریکہ کی شہریت حاصل کرچکے ہیں۔ایم ڈی نے بتایا 2013ء میں حکومت نے18ارب 54کروڑ روپے سبسڈی دیتی تھی جو نوازشریف نے کم کرکے4ارب34 کروڑ روپے کردی ہے جس سے شہریوں کو کھانے پینے کی اشیاء مہنگی فروخت ہورہی ہیں۔ یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن میں کرپشن بھی زوروں پر ہے کرپشن کے126مقدمات نیب،ایف آئی اے اور عدالتوں میں زیر سماعت ہیں،ان میں ادارہ کے77کروڑ روپے لوٹے گئے ہیں، یوٹیلٹی سٹور کارپوریشن کا بورڈ آف ڈائریکٹر کی ازسر نو تشکیل کیلئے حکام بالا کو خط لکھ دیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی


loading...