ہنگو میں واپڈا کی نجکاری کیخلاف ملازمین کا شدید احتجاج

ہنگو میں واپڈا کی نجکاری کیخلاف ملازمین کا شدید احتجاج

ہنگو( بیورورپورٹ)واپڈا ملازمین کا نجکاری کے خلاف زبردست احتجاج ۔ پیسکو ہنگو کے تمام دفاتر کی تالہ بندی ۔ حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی۔ جان کی قربانی دے سکتے ہیں لیکن واپڈہ نجکاری کسی صورت نہیں ہونے دیں گے۔ نجکاری سے ملک تباہی کے دہانے پر پہنچ سکتا ہے۔ واپڈا محنت کش ایک ایک پائی کا حساب لینا جانتے ہیں۔حکومت محنت کشوں کا استحصال بند کریں۔مطالبات نہ ماننے پر ملک گیر احتجاج کریں گے۔ ہائیڈرو یونین چئیر مین حیات وزیر بنگش و دیگر مقررین کا مظاہرین سے خطاب۔ تفصیلات کے مطابق واپڈا ہائیڈرویونین کے زیر اہتمام ہنگو واپڈا ہاؤس میں زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیاجس میں ضلع بھرسے واپڈا ملازمین نے شرکت کی۔ اس موقع پر کام چھوڑ ہڑتال اور واپڈا ہاوس کے تمام دفاتر کی مکمل تالہ بندی کی گئی تھی جبکہ مطاہرے کے دوران واپڈا ملازمین کی جانب سے حکومت کے خلاف نعرہ بازی بھی کی گئی۔ اس موقع پرمظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے ہائیڈرو یونین کے چئیر مین حیات وزیر بنگش، فرخ سیر، جاوید حسین، ملک جاوید، عثمان، خورشید، شاہ نور زمان،سلیم بیگ ،براکت شاہ و دیگر مقررین نے کہا کہ واپڈا ملازمین کے خلاف ہر دور میں سازشیں کی گئیں لیکن واپڈا کے غیور محنت کشوں نے ہمیشہ ہر محاز پر ہر سازش کو ناکام بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت واپڈا کی نجکاری کرنے پر تلی ہوئی ہے لیکن واپڈا کی نجکاری ملک کی مفاد میں نہیں ہے بلکہ ملک سے غداری کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ واپڈا کے منسٹر جو کہ پہلے پی ٹی سی ایل کا منسٹر رہ چکا ہے اس کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اس نے پی ٹی سی ایل کی نجکاری میں مرکزی کردار ادا کیا اور اب وہ واپڈا کی نجاری کرتے ہوئے ملک کی سب سے بڑے ادارے واپڈا کو بھی تباہ کرنے کے درپے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت آن لائن بلنگ اور دیگر ڈیٹا متعارف کرنے کے نام پر واپڈا ملازمین فارغ کیا جا رہا ہے جو کہ سراسر ظلم اور نا انصافی پر مبنی اقدام ہے۔ حیات وزیر بنگش و دیگر نے کہا کہ واپڈا ریٹائرڈ ملازمین کو سنز کوٹہ دینے کا وعدہ کیا گیا تھا جو تاحال ایفا نہ ہو سکا۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف واپڈا میں سہولت کا فقدان اور مسائل کا سامنا ہے جبکہ دوسری طرف حکومت واپڈہ ملازمین کو بلا وجہ فارغ کر کے ملازمین کو مزید مسائل کے دلدل میں دکھیل رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ واپڈا ہنگو ملازمین اوور بلنگ سے مکمل گریز کریں جبکہ اوور بلنگ نہ کرنے پر کاروائی کی صورت میں ہائیڈرویونین ملازمین کی شانہ بشانہ ہو کر ہر قسم کی دفاع کرے گی۔اس موقع پر ملازمین واضح کیا کہ حکومت واپڈا ملازمین کے تمام مسائل حل کرتے ہوئے مطالبات حل کریں بصورت دیگر مرکزی قیادت کے ساتھ مشاورت کے بعد ملک گیر احتجاج کا راستہ اختیار کریں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...