ڈونلڈ ٹرمپ کو دراصل یہ چیز چاہئے

ڈونلڈ ٹرمپ کو دراصل یہ چیز چاہئے
ڈونلڈ ٹرمپ کو دراصل یہ چیز چاہئے

  



ہیلری کلنٹن ڈونلڈ ٹرمپ کو تاریخ کا خطرناک صدرقرار دے چکی ہیں اور اس کی صداقت بھی سامنے آرہی ہے کہ امریکیوں نے ایک ایسے غضبناک کاروباری کو اپنا صدر چن لیا ہے جو پوری دنیا کا امن غارت کرنے پر تُل گیا ہے ۔ شمالی کوریا کے بعد پاکستان کو دھمکی دینے کے بعد اقوام عالم کے ماہرین ڈونلڈ ٹرمپ کی ذہنی حالت پر سوال اٹھانا شروع کر دئیے ہیں اور مشورہ دیا جارہا ہے کہ اپنی دماغی حالت کو سدھارنے کے لئے مینٹل تھیراپی کرائیں ۔ ڈونلڈ ٹرمپ ایک کامیاب بزنس مین ضرور ہے مگر ان میں امریکی صدر بن کر ملکی و عالمی فیصلے کرنے کی صلاحیت و تجربہ نہ ہونے کے برابرنظر آیاہے۔ امریکا پوری دنیا میں "لینڈ آف امیگرنٹس" مانا جاتا ہے مگر حالیہ صدر ٹرمپ کی شدت پسند اور جارحانہ پالیسیوں نے نہ صرف امریکیوں عوام کو آپس میں تقسیم کرنا شروع کر دیا ہے بلکہ بیرون ممالک کے عوام میں امریکہ کے لئے نفرت اور دوریوں کا بیج بھی بو دیاہے۔

دیکھا جائے توٹرمپ کے منتخب ہونے کے بعد ان کی نافذ عمل منفی تبدیلیوں ، فیصلوں اور اقدامات کی وجہ سے امریکی عوام شدت پسندی اور آپس میں اختلافات کا شکار ہو جا رہی ہے۔ ماضی میں ٹرمپ سے پہلے بھی جارج بش نے سپر پاور ہونے کے گھمنڈ میں عراق پر حملہ کیا جس کے بعد امریکی فوجیوں کو طویل عرصے تک عراق میں ٹھہرنے کے فیصلے کا خمیازہ امریکی عوام کو لمبے عرصے تک بھگتنا پڑا۔ ڈونلڈ ٹرمپ بھی ایسی ہی غلطیاں کرنے جارہے ہیں۔ امریکا کی ایلیٹ بزنس کلاس کی لسٹ میں شامل ڈونلد ٹرمپ کو زمینی حقائق کا علم نہیں ۔ ایسا لگتا ہے کہ وہ رات کو جو خواب دیکھتے یا کوئی خیال انہیں تنگ کرتا ہے تواسے ٹویٹ کردیتے ہیں اور یوں ساری دنیا میں امریکی پالیسیوں کی جگ ہنسائی ہو رہی ہے۔

ٹرمپ کی عوامی حمایت میں کمی اور مقبولیت کا گراف تیزی کے ساتھ نیچے جا رہا ہے۔ ٹرمپ کو چاہیے کہ وہ مثبت سوچ ، برباری، دانشمندی اور عقل مندی کے ساتھ فیصلے کرے جس کا فائدہ نہ صرف امریکہ بلکہ اقوام عالم میں امن و سکون کی فضا ء قائم ہو گی ۔ اورامریکی ری پبلیکن جماعت بھی فخریہ انداز میں امریکی عوام اور دنیا کو باور کرا سکے گی کہ جارج بش کی غلطی کو سدھارتے ہوئے اس جماعت نے یہ اچھا کام کیا ہے ۔

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔

اگر ٹرمپ نے اپنا رویہ تبدیل نہ کیا تو عالمی برادری کے ساتھ امریکی عوا م میں بد اعتمادی اور مایوسی پھیلے گی اور آنے والے دنوں میں دنیا یہ کہے گی کہ امریکیوں نے ایک ذہنی اور جنونی شخص کو ہیلری پر فوقیت دے کر بہت بڑی غلطی کی جس کا نتیجہ انہیں بھی معاشی ، سیاسی اور سماجی طور پر بھگتنا پڑے گا۔

۔

نوٹ: روزنامہ پاکستان میں شائع ہونے والے بلاگز لکھاری کا ذاتی نقطہ نظر ہیں۔ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں۔

مزید : بلاگ