نواز شریف اور شہباز شریف مریم نواز کے ساتھ بھی ہاتھ کر گئے؟ انتہائی حیران کن خبر آگئی

نواز شریف اور شہباز شریف مریم نواز کے ساتھ بھی ہاتھ کر گئے؟ انتہائی حیران کن ...
نواز شریف اور شہباز شریف مریم نواز کے ساتھ بھی ہاتھ کر گئے؟ انتہائی حیران کن خبر آگئی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق آرمی ایکٹ میں ترمیم کے معاملے پر مسلم لیگ ن نے حکومت کا غیر مشروط ساتھ دینے کا اعلان کیا ہے۔ ن لیگ کے کارکنوں کی جانب سے اس فیصلے پر سخت رد عمل کا اظہار کیا جارہا ہے اور اسے ’ووٹ کو عزت دو ‘ کے بیانیے کی نفی قرار دیا جارہا ہے، اس معاملے پر اب مریم نواز نے بھی ڈھکے چھپے انداز میں اپنی ناپسندیدگی کا اظہار کیا ہے۔

مریم نواز گزشتہ کافی عرصے سے ٹوئٹر پر بظاہر ایکٹو نظر نہیں آتیں لیکن حالات حاضرہ کو دیکھنے کیلئے وہ باقاعدگی کے ساتھ ٹوئٹر استعمال ضرور کرتی ہیں جس کا اندازہ ان کے لائکس سے لگایا جاسکتا ہے۔ جمعہ کے روز مریم نواز نے آرمی ایکٹ سے متعلق ن لیگ کی سوشل میڈیا ٹیم کے صدر میاں عالمگیر شاہ کی 2 ٹویٹس کو لائک کیا ہے جس سے ان کی اس معاملے پر سوچ واضح ہوتی ہے۔

میاں عالمگیر نے جمعرات کو ٹویٹ میں لکھا ’ مسلم لیگ ن کے شیروں مایوس نا ہوں، آپ کے قائد زندہ ہیں، خود کو متحد رکھیں، جذبات پر قابو رکھیں، اپنے قائد کے وہ الفاظ یاد رکھیں کہ نوازشریف آپ کو جھکنے نہیں دے گا، قائد کی بصیرت ہماری سوچ سے بڑی ہے، قائد کے فیصلے اور قائد کے موقف کا انتظار کریں، جیت آپ کی ہوگی۔ انشاءاللہ۔‘

اس ٹویٹ کے جواب میں ایک لیگی کارکن نے لکھا ’ اور اگر سارے معاملے میں مریم نواز کی رضا مندی بھی شامل ہوئی تو؟ پھر کیسے لیڈر بنائیں گے ہم ؟ شدید شرمندگی ہورہی ہے کل سے۔‘

کارکن کی اس پریشانی کا جواب دیتے ہوئے میاں عالمگیر شاہ نے لکھا ’ سو فیصد گارنٹی دے سکتا ہوں کہ مریم نوازشریف سے کوئی مشاورت نہیں کی گئی، سب پوچھتے ہیں مریم نوازشریف کیوں خاموش ہیں ، کسی کو نہیں معلوم کہ مریم نوازشریف اس وقت جو قید گزار رہی ہیں وہ اس قید سے زیادہ تکلیف دہ ہے جو قید انہوں نے جیل میں گزاری۔‘

مریم نواز نے عالمگیر شاہ کے ان دونوں ٹویٹس کو لائک کیا ہے جس کے بعد یہ ان کی اپنی ٹائم لائن پر بھی نظر آرہے ہیں، اس سے ظاہر ہوجاتا ہے کہ مریم نواز کا آرمی ایکٹ میں ترمیم کے معاملے پر کیا موقف ہے ، ان ٹویٹس سے یہ بھی پتا چلتا ہے کہ مریم نواز کو مذکورہ معاملے پر مشاورت سے باہر رکھا گیا ہے۔

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...