قاسم سلیمانی کے قتل پر کونسے دوملک خوش ہیں ؟تجزیہ کار ہارون الرشید کی نشاندہی

قاسم سلیمانی کے قتل پر کونسے دوملک خوش ہیں ؟تجزیہ کار ہارون الرشید کی ...
قاسم سلیمانی کے قتل پر کونسے دوملک خوش ہیں ؟تجزیہ کار ہارون الرشید کی نشاندہی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہاہے کہ قاسم سلیمانی کو قتل کرکے امریکہ کہہ رہاہے کہ اس سے امریکی شہریوں کی زندگیاں محفوظ ہونگی لیکن اس کے بعد عراق سے اپنے شہریوں کو نکلنے کاحکم دیدیا ہے،، اس قتل سے سوائے امریکہ اور سعودی عرب کے کوئی خوش نہیں ہے۔

نجی نیوز چینل 92کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ہارون الرشید نے کہا کہ قاسم سلیمانی کو قتل کرکے امریکہ کہہ رہاہے کہ اس سے امریکی شہریوں کی زندگیاں محفوظ ہونگی لیکن اس کے بعد عراق سے اپنے شہریوں کو نکلنے کاحکم دیدیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس حملے پر روس نے سخت ردعمل دیا ہے اور چین نے بڑا محتاط ردعمل دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس قتل کا ساری اسلامی دنیا پر اثر پڑے گا ، اس سے سوائے امریکہ اور سعودی عرب کے کوئی خوش نہیں ہے ۔

ہارون الرشید کا کہنا تھا کہ ایران کے اثرات بحرین ، سعودی عرب اورافغانستان میں ہیں، اب تلخی بڑھے گی ،ایران چاہے تو اس حملے کاجواب افغانستان میں دے سکتاہے، طالبان ایرانیوں سے کہتے رہے ہیں کہ ہمیں طیارہ شکن میزائل دے دیں ، اگر وہ طالبان کو طیارہ شکن میزائل دے دیتے ہیں تو اس کا نتیجہ کیا ہوگا ؟ اس قتل سے ایران میں مزید اتحادہوگا اور ملاازم بڑھ جائے گا ، پرو امریکہ اور سیکولر طاقتیں مزید کمزور ہونگی ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور