شوگر ملز 6روز سے بند، کسانوں کی کمائی کھیتوں میں ضائع ہونیکا خدشہ،احتجاج، دھرنے کی تیاریاں 

شوگر ملز 6روز سے بند، کسانوں کی کمائی کھیتوں میں ضائع ہونیکا خدشہ،احتجاج، ...

  



ٍٍمظفر گڑھ‘کوٹ ادو(نامہ نگار‘تحصیل رپورٹر) سیاستدانوں اور شوگرملز مالکان کی کسان کو کچلنے کی باہمی سازشسامنے آگئی شوگر ملز(بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

 مافیا نے کمشنر کا حکم بھی ہوامیں اڑادیا،6روز سے شوگر ملیں بندہیں،90فیصد گنا کی فصل کھیتوں میں موجود ہیں،گندم کی کاشت بھی نہ ہو سکے گی،شوگر ملوں کی بندش سے کسانوں کی سال بھرکی کمائی کے بھی ضائع ہونے کا خدشہ، شوگر ملیں بند ہونے سے گنا لانے والے کاشتکار ذلیل وخوار ہورہے ہیں ،گنامسلسل سوکھ رہاہے اورفی ٹرالی وزن میں 50‘ 50من سے زائد کمی ہوچکی ہے،اگر شوگر ملیں نہ چلائی گئی تو گنا کی فصل کوآگ لگا دیں گے،مقامی زمینداروں و کاشتکاروں نے دھمکی دیدی اس بارے تفصیل کے مطابق سیاستدانوں اور شوگر مل مالکان کی باہمی سازش سے زمینداروں اور کسانوں کا معاشی قتل جاری ہے،پنجاب حکومت اور وفاقی حکومتوں نے شوگرملز مافیا کے سامنے اپنے گھٹنے ٹیک دئیے،شوگر ملز مالکان نے کمشنر ڈیرہ غازیخان نسیم صادق کا حکم بھی ہوامیں اڑادیا ہے اور گزشتہ6روز سے تحصیل کوٹ ادو میں قائم فاطمہ شوگر ملز اورشیخو شوگر ملزمالکان نے خودساختہ خسارہ کے نام پر کرشنگ سیزن ختم کرتے ہوئے دونوں شوگر ملوں کو بند کردیا ہے جبکہ تحصیل کوٹ ادو میں ہزاروں ایکڑ پر کھڑی گنا کی فصل کا 10فیصد گنا مل تک پہنچ سکا جبکہ90فیصد گنا ابھی کھیتوں میں موجود ہے، اس حوالے سے مقامی زمینداروں رئیس ٹھٹھہ میاں عتیق الرحمٰن گورمانی،چوہدری عبدالوحید،ملک طاہر محمود پتل،طلعت خان ترین،مریدجگلانی،امجد خان گورمانی،ملک لیاقت علی درگھ،حاجی رضا خان گورمانی،انجم ربانی گجر،عدنان گشکوری،فیصل ترین،ناصر مجید ودیگر نے شوگرملز بندہونے کی شدیدمذمت کرتے ہوئے کہا کہ جہاں ایک طرف شوگر ملز بند ہونے سے چینی کی قیمت میں اضافے کا خدشہ ہے وہیں ملز کی بندش سے کسانوں کی سال بھرکی کمائی کے بھی ضائع ہونے کا اندیشہ ہے،انہوں نے کہا کہ شوگر ملز مالکان نے کسانوں کو بلیک میل کرنے اور گناسستے داموں خریدنے کیلئے شوگرملز کو بند کیا، پنجاب حکومت اور وفاقی حکومتوں نے شوگر مافیا کے سامنے اپنے گھٹنے ٹیک دئیے ہیں اور حکومت نے اس حوالے سے مجرمانہ خاموشی اختیار کر رکھی ہے جبکہ وفاقی حکومت بھی مکمل خاموش ہے کسانوں کے مسائل اور گنے کے کاشتکاروں کے مسائل کی نہ پنجاب اسمبلی میں کوئی شنوائی ہو رہی ہے اور نہ ہی ان مسائل کو اسمبلیوں کے اندر اٹھایا جا رہا ہے جس سے کسان مایوس ہیں،انہوں نے کہاکہ شوگر ملیں بند ہونے سے گنا لانے والے کاشتکار ہفتہ بھر سے ذلیل وخوار ہورہے ہیں لیکن حکومت اور انتظامیہ کا کوئی ذمہ دار بات سننے کوتیارنہیں،یہ گنا ضلع کی کوئی دوسری ملز گنا خرید کرنے کیلئے تیار نہیں،گنامسلسل سوکھ رہاہے اورفی ٹرالی وزن میں 50‘ 50من سے زائد کمی ہوچکی ہے،انہوں نے کہاکہ ان کی گنے کی90فیصد فصل ابھی تک کھیتوں میں کھڑی ہے حالانکہ گنے کی فصل کی کٹائی کے بعد کسانوں اور کاشت کاروں نے گندم کی کاشت کرنی ہوتی ہے،حکومتی پالیسی کے تحت ابھی تک کاشت کار گندم کی فصل کاشت نہیں کر سکے، شوگر ملز مالکان نے ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت دونوں ہاتھوں سے گنے کے کسانوں، کاشت کاروں اور زمینداروں کو لوٹنے کے درپے ہیں، حکمران اشرافیہ بھی ان کے ساتھ ہے اور سیاستدانوں اور شوگر مل مالکان کی اس باہمی سازش کے تحت کاشت کاروں، کسانوں اور زمینداروں کا معاشی قتل کیا جا رہاہے،انہوں نے کہا کہ  کھاداور معیاری زرعی ادویات نہ صرف بلیک میں فروخت ہو رہی ہیں بلکہ کرپٹ مافیا ان کی پشت پناہی بھی کر رہا ہے،انہوں نے کہا کہ  حکومت کی ناقص اور غیرموثر پالیسیوں کے باعث زراعت جو کہ ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کا درجہ رکھتی ہے آج تباہ حالی کا شکار ہے، اگر شوگر ملیں نہ چلائی گئی  تو کاشتکارگنے کے کسان اور کاشتکار گنا کی فصل کو آگ لگانے پر مجبور ہو جائیں گے اور آئندہ گنے کی بجائے کسی دوسری فصل کی کاشت شروع کر دیں گے،دریں اثناء پاکستان کسان اتحاد چیئرمین سردار محمد سلیم خان جتوئی شاہد نعیم رزاق خان جتوئی  ایڈووکیٹ نے آج 11بجے دن پاکستان کسان اتحاد کہ زیر اہتمام ریلی کی شکل میں اور ٹریکٹر ٹرالیوں کی صورت میں گنے سے لوڈ فاطمہ شوگر ملز کہ گیٹ کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان کردہا.پاکستان کسان اتحاد چیئرمین سردار محمد سلیم خان جتوئی شاہد نعیم رزاق خان جتوء ایڈووکیٹ نے کہا کہ وہ آج سینکڑوں کسانوں کے ہمراہ شوگر ملز مافیا کہ خلاف دھرنا فاطمہ شوگر ملز کے سامنے دھرنا دیں گے دریں اثنا  رکن صوبائی اسمبلی سردار نیاز حسین خان گشکوری نے کسانوں کے ایک وفد کے ہمراہ ڈی سی مظفر گڑھ امجد شعیب ترین سے شوگر ملز مالکان کی ہٹ دھرمی کے حوالے سے ملاقات کی. نیاز حسین خان گشکوری نے ڈی سی  مظفرگڑھ کو فوری طور پر ضلع کی بند شوگر ملز چلوانے پر زور دیا۔ ڈی سی مظفر گڑھ نے شوگر ملز مالکان کو شارٹ نوٹس جاری کر دیا ہے۔

دھمکی 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...