سکھر، عمارت کے ملبے سے 22گھنٹے بعد5سالہ بچی کو زندہ نکال لیا گیا

سکھر، عمارت کے ملبے سے 22گھنٹے بعد5سالہ بچی کو زندہ نکال لیا گیا

  



سکھر(آئی این پی)سکھر میں حسینی روڈ پر تین منزلہ عمارت کے ملبے تلے دب جانے والی پانچ سالہ بچی کو 22 گھنٹوں بعد زندہ نکال(بقیہ نمبر17صفحہ12پر)

لیا گیا۔ریسیکو ذرائع کا کہنا ہے کہ پانچ سالہ نوین کوسول اسپتال سکھر منتقل کردیا گیا ہے۔سکھر میں 3منزلہ عمارت گرنے سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 6ہو گئی جن میں خاتون اور بچی بھی شامل ہیں، واقعے میں 18افراد زخمی ہوئے ہیں۔جائے حادثہ پر امدادی سرگرمیوں میں پاک فوج اور رینجرز کے جوانوں نے بھی حصہ لیا۔ریسکیو ذرائع کا کہنا ہے کہ عمارت کے ملبے سے اب تک 6لاشیں اور18زخمیوں کو نکالاجاچکاہے۔3 منزلہ عمارت میں 4 بھائیوں کے خاندان آباد تھے جبکہ نیچے دکانیں تھیں، عمارت گرتے ہی بجلی کی سپلائی بھی معطل ہو گئی۔اطلاع ملتے ہی امدادی ٹیمیں، رینجرز اور پاک فوج کے جوان موقع پر پہنچ گئے، سول اسپتال سکھر میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی۔کمشنر سکھر شفیق احمد مہیسر کا کہنا ہے کہ عمارت گرنے کی 2 وجوہات ہو سکتی ہیں، ایک ناقص مٹیریل یا پھر عمارت کا نقشے کے مطابق تعمیر نہ کیا جانا، تاہم اس کی تفتیش کی جائے گی۔

بچی زندہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...