شجاع آباد: جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے اندھا قتل ٹریس، ملزم گرفتار، تفتیش شروع

شجاع آباد: جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے اندھا قتل ٹریس، ملزم گرفتار، تفتیش شروع

  



شجاع آباد (تحصیل رپورٹر) تھانہ سٹی پولیس نے ایک ماہ قبل ہونیوالے اندھے قتل کا جدید ٹکنالوجی کے ذریعے سراغ لگالیا ہے  قاتل خاتون کا آشنا نکلا تھانہ سٹی پولیس نے ایک ماہ قبل ہونیوالے اندھے قتل کا سراغ جدید ٹکنالوجی کی مدد سے سراغ لگالیا ایک ماہ قبل مقتولہ عطا الہی کو گھر سے اغواء کرکے زیادتی کرنے کے بعدکپاس کے کھیتوں میں قتل کردیا گیا جس پر تھانہ سٹی شجاع آباد نے آرپی او سی پی او کے حکم(بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

 پر ایک ٹیم تشکیل دی جس کی سربراہی ایس پی صدر رانااشرف اے ایس پی ملک سنگھار نے کی  ایس پی صدر رانا اشرف اے ایس پی ملک سنگھار نے پریس کا نفریس کرتے ہوئے صحافیوں کو بتایاکہ ہم جدید ٹکنالوجی کی مدد سے مقتولہ عطاالہی کے قاتل مقبل جوکہ7فیض لاڑ کارہائشی ہے کو گرفتار کرلیا اور قاتل نے اعتراف جرم کرتے ہوئے دوران تفیش بتایا کہ میں نے مقتولہ عطاالہی کوبداخلاقی کرنے کے بعد قتل کیاہے مجھے شک تھاکہ اس کی میرے علاوہ کسی اور سے بھی دوستی ہے اور میرا مقتولہ سے فون پر رابطہ بھی تھا مقتولہ عطاالہی پانچ بچوں کی ماں تھی اندھے قتل کی وجہ سے پورے علاقے میں خوف ہراس پھیلا ہوا تھا انتہائی کم وقت میں اندھے قتل کا سراغ لگانے پر مقتولہ کے ورثا اور شہریوں نے بڑی تعداد میں ایس پی صدر رانااشرف اے ایس پی ملک سنگھار اور انکی پوری ٹیم کو پھولوں کے ہار پہنائے اور مبارکبادی اور پولیس کی اعلیٰ کارگردگی پر ان کا شکریہ بھی ادا کیا۔

قتل ٹریس

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...