بیٹے کیخلاف مقدمہ،میئر کراچی نے معافی مانگ لی

بیٹے کیخلاف مقدمہ،میئر کراچی نے معافی مانگ لی
بیٹے کیخلاف مقدمہ،میئر کراچی نے معافی مانگ لی

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)وسیم اختر کے بیٹے کے ہاتھوں نوجوان کے زخمی ہونے کے معاملے میں پیشرفت ہوئی ہے۔میئر کراچی میئر وسیم اختراپنے بیٹے تیمورکے ہاتھوں زخمی ہونے والے نوجوان حسنین حیدر کے گھر پہنچ گئے جہاں انہوں نے حسنین کے والد محبوب عباس سے بات چیت کے بعد سارامعاملہ حل کرلیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق اس موقع پر میئر کراچی نے اپنے بیٹے کی غلطی تسلیم کرتے ہوئے معذرت کرلی۔وسیم اختر نے کہا اس طرح کا واقعہ نہیں ہونا چاہئے تھا۔سب بھائی ہیں اور بھائیوں کے درمیان جو ہوا ہے وہ غلط ہے۔

دوسری جانب شہری محبوب عباس کا کہنا تھا کہ میئر وسیم اختر نے ان کے گھر آکر معذرت کی ہے اور انہوں نے اپنی خاندانی روایات کو برقرار رکھتے ہوئے معذرت کو قبول کرلیا ہے۔انہوں نے کہا میئر کو بھی یقین دہانی کرادی گئی ہے اور اب مقدمہ واپس لے لیا جائے گا۔

واضح رہے کہ نیو ایئر نائٹ پر میئر کے بیٹے نے ایک شہری کو تشدد کا نشانہ بنایا تھاجس کے بعد حسنین نامی شہری نے میئر کراچی کے بیٹے کیخلاف مقدمہ درج کروایاتھا۔تیمور کے اقدام کو سوشل میڈیا پر بھی اچھالا گیاتھا جس پر لوگوں نے انہیں تنقید کا نشانہ بنایاتھا۔

نوجوان حسنین حیدرکاکہنا تھا کہ سال نو پر ڈیفنس فیز 8 میں پیٹرول پمپ پر ڈبل کیبن میں سوار گارڈ نے ہوائی فائرنگ کی، گارڈز سے فائرنگ کی وجہ دریافت کرنے پر مجھے تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔حسنین حیدر نے الزام عائد کیا ہے کہ اس پر تشدد کرنے والوں میں میئر کراچی وسیم اختر کا بیٹا شامل ہے۔

پولیس نے حسنین حیدر کی مدعیت میں میئر کراچی وسیم اختر کے بیٹے تیمور وسیم اور گارڈز کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیاتھا۔

واقعے پرردعمل دیتے ہوئے سندھ کی سابق رکن اسمبلی ارم عظیم فاروقی نے میئر وسیم اختر کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ٹویٹر پردیئے گئے بیان میں ارم نے کہا کہ میئر کراچی کی دوسری بیوی سے ان کے بیٹے کی جانب سے خلاف قانون فائرنگ کی گئی۔لیکن واقعے کے دوروز تک مزاحمت کے بعدپولیس نے ان کے بیٹے کیخلاف ایف آئی آر کاٹی جو کہ شرمناک ہے۔انہوں نے بتایاکہ میئر کے بڑے بیٹے کو کچھ سال پہلے دبئی سے ڈی پورٹ کیاگیاتھا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...