طاقتور ترین ایرانی جنرل سلیمانی کاسفرآخرت شروع، نماز جنازہ میں وزیراعظم سمیت لاکھوں افراد شریک

طاقتور ترین ایرانی جنرل سلیمانی کاسفرآخرت شروع، نماز جنازہ میں وزیراعظم ...
طاقتور ترین ایرانی جنرل سلیمانی کاسفرآخرت شروع، نماز جنازہ میں وزیراعظم سمیت لاکھوں افراد شریک

  



بغداد(ڈیلی پاکستان آن لائن)گزشتہ روز امریکی حملے میں جاں بحق ہونے والے ایران کے طاقتور ترین جنرل قاسم سلیمانی اورعراقی ملیشیاپاپولر موبلائزیشن کے ڈپٹی کمانڈر ابو مہدی المہندس کا سفر آخرت بغداد کے ضلع خادمیہ سے شروع ہوگیا۔

مرحومین کاجنازہ اٹھانے کے وقت لاکھوں کی تعداد میں عراقی ، ایرانی، شامی اور دیگر ممالک سے تعلق رکھنے والے ان کے چاہنے والے وہاں جمع ہوئے ۔

اس موقع پر لوگوں نے امریکا مردہ باد کے فلک شگاف نعرے لگائے۔ قومی پرچموں میں لپٹے مرحومین کے جسد خاکی ضلع گرین زون میں واقع ڈپلومیٹک کمپاونڈ لائے گئے جہاں ریاستی سطح پر انہیں خراج عقیدت پیش کیاگیا۔اس موقع پر عراقی وزیراعظم سمیت ملک کی اعلیٰ سول و عسکری قیادت بھی موجود تھی۔

سحر نیوزکے مطابق ’کاظمین کے حرم مطہر میں شہداءکو طواف کرایا جائے گا جس کے بعد شہداءکو کربلا اور نجف اشرف لے جایا جائے گا۔وہاں حرم حسینی اور علوی کا طواف کرایا جائےگا اور اس کے بعد شہیدجنرل قاسم سلیمانی کی میت کو مشہد الرضا میں حرم رضوی میں تشییع اور طواف کے بعد تہران منتقل کیا جائےگا۔ منگل کے روز شہید قاسم سلیمانی کو ان کے آبائی علاقے صوبہ کرمان میں سپرد خاک کیا جائےگا‘۔

ایرانی خبررساں اداروں کے مطابق جنرل قاسم سلیمانی کا جسدخاکی تہران پہنچنے پر ایک تعزیتی تقریب منعقد کی جائے گی جس کے بعد انہیں مشہد روانہ کیاجائے گاوہاں بھی انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے تعزیتی تقریب کاانعقاد کیاجائے گاجس کے بعد ان کی تدفین کی جائے گی۔

مزید : بین الاقوامی /عرب دنیا /اہم خبریں