”وزیراعظم اور مجھے دونوں کو الو گوشت بہت پسند آیا، وزیراعظم کا کہنا تھا کہ۔۔۔“اسد عمر نے ایسی بات کہہ دی کہ سوشل میڈیا صارفین ٹوٹ پڑے

”وزیراعظم اور مجھے دونوں کو الو گوشت بہت پسند آیا، وزیراعظم کا کہنا تھا ...
”وزیراعظم اور مجھے دونوں کو الو گوشت بہت پسند آیا، وزیراعظم کا کہنا تھا کہ۔۔۔“اسد عمر نے ایسی بات کہہ دی کہ سوشل میڈیا صارفین ٹوٹ پڑے

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سوشل میڈیا پر ذرا سی غلطی کس قدر ہنگامہ برپا کرسکتی ہے اس کا اندازہ آپ اسد عمرکے ایک ٹویٹ سے لگاسکتے ہیں جس میں املا کی غلطی نے لوگو ں کو تفریح کا موقع فراہم کردیا۔گزشتہ روزوزیراعظم عمران خان نے فیصل آباد میں ایک پناہ گاہ کاافتتاح کیالوگوں کے ساتھ کھانا کھایا اورپکوان کی بہت تعریف کی۔

شاید آلو گوشت کچھ زیادہ ہی مزیداربناتھا اس لئے وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسدعمرنے بھی ان کی لذت کے گن گانے کیلئے ٹویٹ داغ دیا۔تاہم یہاں اسد عمر سے چھوٹی سے غلطی ہوگئی اور وہ آلو کے الف کے اوپر مد(آ) لگانا بھول گئے جس کی وجہ سے وہ الو پڑھا جانے لگا۔ اب ایسی غلطی ہواور سوشل میڈیا صارفین کی رگ شرارت نہ پھڑکے ایسا بھلا کیسے ممکن ہے۔

اسد عمر نے لکھا کہ ’’فیصل آباد میں پناہ گاہ کے دورے پر کھانا کھانے کا موقع ملا. وزیراعظم اور مجھے دونوں کو الو گوشت بہت پسند ایا. وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ وزیراعظم ہاؤس سے بہتر پکا ہوا ہے‘‘۔

تھوڑی ہی دیر میں سیکڑوں صارفین نے ’الو گوشت‘کا مذاق اڑانا شروع کردیا۔سید حسن نسیم نامی صارف نے کہا ’اب پتہ چلا الو گوشت کیسا ہوتا ہے۔ عوام کتنے پہلے سے نوش کر رہے ہیں الو گوشت کو اور تعریفوں کی قلابیں ملا رہے ہیں‘

عثمان عالم نے لکھا’کیا!۔۔۔یہ کیا نکل گیا موصوف آپکے منہ سے؟؟ وزیراعظم صاحب نے توکہاتھاکہ میں وزیراعظم ہاوس میں رہوں گا ہی نہیں۔۔ اور سادے پانی سے اپنی اور سب کی تواضع کروں گا۔۔۔ مگر دوسروں کے بارے میں تو ایسا ہی لیکن اپنی دفعہ وزیراعظم شاید بھول رہے ہیں!!“

ملک آف حاصل نے کہا’ارے اوبڑے صاحب کب تک الو بناو گے عوام کو۔کیا ابھی اپنے گھر کی شادی میں اسی کک سے پکوایا تھا کھانا۔عوام کو دو وقت کی روٹی کیلئے ترساکر یہ ٹویٹ کر کے عوام کا مذاق بنا رہا ہے کیا ؟‘

ایک اور صارف نے لکھا’جیسے ایک نقطہ محرم سے مجرم بنا دیتا ہے بالکل ویسے ہی ایک "مد آ" آلو کو الو بنا دیتی ہے۔ پس ثابت ہوا لاہوری کھوتا خور تے لاءلپوری الو خور ‘

عمر بیگ نے لکھا’لنگر خانہ پہ گلاٹیاں مارنا ہمیں سوٹ نہیں کرتا اسد صاحب تاریخ کی مثال دیتے ہیں بتائیں چائنا نے لنگر خانہ سے معیشت بڑھائی.؟جرمنی کیسے مضبوط ہوا ؟کیا نبی کریم ﷺکی حدیث کافی نہ تھی مانگنے والا ہاتھ دینے والے سے بہتر ہے، کلہاڑا اور رسی منگوائی کہ مزدوری کرو،انصافی بنیں پٹواری نہیں‘۔

واضح رہے وزیر اعظم عمران خان نے جمعہ کی دوپہر جنرل بس اسٹینڈ فیصل آباد میں تعمیر کی گئی جدید سہولتوں سے آراستہ پناہ گاہ کا افتتاح کردیا۔ انہوں نے پناہ گاہ میں موجود افراد کیساتھ کھانا بھی کھایا اور یہاں کے بنے کھانوں کی تعریف کی۔ وزیراعظم کی وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کے ہمراہ آمد پر انکا پرتپاک خیرمقدم کیا گیا۔ وزیر اعظم نے جنرل بس اسٹینڈ آمد کے فوری بعد پناہ گاہ کے مختلف شعبوں کا دورہ کیا جہاں انہیں پناہ گاہ کے بارے میں بریفنگ بھی دی گئی۔

اس موقع پر پناہ گاہ کی تعمیر کا بیڑا اٹھانے والے صنعتکار میاں محمد حنیف نے وزیر اعظم و وزیر اعلیٰ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایاکہ جنرل بس اسٹینڈ فیصل آباد پر قائم کی گئی پناہ گاہ میں بے گھر و پردیسی افراد اور مسافروں کو رات گزارنے کیلئے قیام و طعام کی بہترین سہولیات میسر آسکیں گی۔وفاقی وزیر اسد عمر نے اس حوالے سے سوشل میڈیا پر بیان بھی جاری کیا۔اسد عمر نے ٹوئٹر پر لکھا کہ فیصل آباد میں پناہ گاہ کے دورے پر کھانا کھانے کا موقع ملا، وزیراعظم اور مجھے دونوں کو آلو گوشت بہت پسند آیا۔وفاقی وزیر نے لکھا وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ کھانا وزیراعظم ہاوس سے بھی بہتر پکا ہوا ہے۔

مزید : قومی /ڈیلی بائیٹس


loading...