نسیم شاہ کیساتھ بچپن میں ایسا کیا ہوا تھا کہ ان سے لمبے سپیل نہیں کروائے جا رہے؟ وقار یونس نے تشویشناک انکشاف کر دیا

نسیم شاہ کیساتھ بچپن میں ایسا کیا ہوا تھا کہ ان سے لمبے سپیل نہیں کروائے جا ...
نسیم شاہ کیساتھ بچپن میں ایسا کیا ہوا تھا کہ ان سے لمبے سپیل نہیں کروائے جا رہے؟ وقار یونس نے تشویشناک انکشاف کر دیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی ٹیم کے باﺅلنگ کوچ وقار یونس نے فاسٹ باﺅلرز کی ٹی 20 لیگز میں شرکت محدود رکھنے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے کھلاڑیوں کے مالی نقصان کی تلافی کیلئے کوئی راستہ نکالنے کی تجویز پیش کر دی ہے، نسیم شاہ کو بچپن میں کمر کے 2 سٹریس فریکچر ہو چکے جس کے باعث ان سے بھرپور رفتار کیساتھ چھوٹے سپیل کرانا ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق غیر ملکی ویب سائٹ کو دئیے گئے انٹرویو میں وقار یونس نے کہا کہ پاکستان کے نوجوان فاسٹ باﺅلرز مستقبل کا اثاثہ ہیں اور میں ان کی صلاحیتیں نکھارنے کیلئے پرجوش انداز میں کام کررہا ہوں،بیشتر باﺅلرز کی عمر 20 سال سے کم ہے اس لئے انہیں بڑی احتیاط سے کیریئر میں آگے بڑھانے کی ضرورت ہے، آج کے باﺅلرز ہر طرز کی کرکٹ کھیلتے ہیں البتہ ان کی ترجیح ٹیسٹ میچز ہونا چاہئیں۔

انہوں نے کہا کہ کمائی پر ہر کسی کا حق ہے اور لیگز اس کا ذریعہ بھی ہیں، میں نے پی سی بی سے کہا ہے کہ معاشی پہلو کو نظر میں رکھتے ہوئے کوئی ایسی پالیسی بنائیں جس سے کرکٹرز لیگر کے بجائے پاکستان میں کھیلنے کو ترجیح دیں، فاسٹ باﺅلرز کے مالی معاملات دیکھنے کے ساتھ ان پر بوجھ بھی کم کرنا ہو گا، اس ضمن میں بورڈ کام کررہا ہے اور اس کو معاہدے کی کوئی شکل دی جا سکتی ہے۔

وقار یونس نے کہا کہ فاسٹ باﺅلرز کی گرومنگ کرتے ہوئے کئی پہلو پیش نظر رکھنا ہوں گے، نسیم شاہ کو بچپن میں کمر کے 2 سٹریس فریکچر ہوچکے،ان کو تکلیف ہوجانے کی فکر رہتی ہے،فی الحال ان سے مسلسل 8اوورز کروانے کے بجائے بھرپور رفتار سے چھوٹے سپیل کرانا ہوں گے، ساتھ فٹنس پر بھی کام کرتے رہنا ہے۔

مزید : کھیل