اگر ایران امریکہ جنگ ہوئی اور یہ تیسری جنگ عظیم نہ بھی بنی تو تیل کی قیمت کتنی ہوجائے گی؟ جان کر پاکستانیوں کا تیل نکل جائے

اگر ایران امریکہ جنگ ہوئی اور یہ تیسری جنگ عظیم نہ بھی بنی تو تیل کی قیمت کتنی ...
اگر ایران امریکہ جنگ ہوئی اور یہ تیسری جنگ عظیم نہ بھی بنی تو تیل کی قیمت کتنی ہوجائے گی؟ جان کر پاکستانیوں کا تیل نکل جائے

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کی طرف سے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کو قتل کیے جانے کے بعد دونوں ملکوں کے مابین جنگ چھڑنے کا خطرہ شدید تر ہو چکا ہے۔ اگر جنگ چھڑ جاتی ہے تو باقی دنیا کو دیگر نقصانات کے ساتھ ساتھ یہ خمیازہ بھی بھگتنا پڑے گا کہ تیل کی قیمت دو گنا سے بھی زیادہ بڑھ جائے گی۔

میل آن لائن کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر ایران اور امریکہ کی جنگ ہوتی ہے تو تیل کی قیمت 150ڈالر فی بیرل سے تجاوز کر جائے گی۔ جو موجودہ قیمت سے دو گناہ سے زیادہ ہو گی۔

ماہرین کے مطابق جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد مشرق وسطیٰ میں جو کشیدگی کی صورتحال پیدا ہو چکی ہے ، وہی تیل کی قیمتوں پر بہت زیادہ اثر انداز ہو رہی ہے اور تیل کا ایک اہم ترین روٹ بند ہونے سے برینٹ کروڈ آئل کی قیمت میں 5فیصد اضافہ ہو گیا ہے۔ اس اضافے کے بعد تیل کی قیمت 69.50ڈالر فی بیرل تک پہنچ گئی۔ ماہرین کے مطابق تیل کی تمام عالمی رسد کا 20فیصد آبنائے ہرمز سے گزرتا ہے جو کہ ایران اور عرب خطے کے درمیان ایک تنگ سمندری گزرگاہ ہے۔ اگر اس راستے سے دنیا کو تیل کی فراہمی بند ہوتی ہے تو عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں لامحالہ اضافہ ہو گا۔ سعودی تیل کمپنی آرامکو پر حملے کے بعد جنرل قاسم سلیمانی کا قتل دوسرا بڑا واقعہ ہے جس پر تیل کی قیمتوں میں سب سے زیادہ اضافہ ہوا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...