”بھارتی کرکٹ ٹیم نے 2004ءمیں پاکستان کا کس کی وجہ سے کیا تھا؟“ راشد لطیف نے حیران کن انکشاف کرتے ہوئے اسی شخص سے ایک مرتبہ پھر مطالبہ کر دیا

”بھارتی کرکٹ ٹیم نے 2004ءمیں پاکستان کا کس کی وجہ سے کیا تھا؟“ راشد لطیف نے ...
”بھارتی کرکٹ ٹیم نے 2004ءمیں پاکستان کا کس کی وجہ سے کیا تھا؟“ راشد لطیف نے حیران کن انکشاف کرتے ہوئے اسی شخص سے ایک مرتبہ پھر مطالبہ کر دیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق وکٹ کیپر بلے باز راشد لطیف نے انکشاف کیا ہے کہ 2004ءمیں بھارتی کرکٹ ٹیم کا دورہ پاکستان اس وقت کے کپتان سارو گنگولی کی کاوشوں کی بدولت ممکن ہوا، اس لئے وہ ایک مرتبہ پھر پاکستان اور بھارت کے درمیان باہمی سیریز کے انعقاد میں کردار ادا کر سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق راشد لطیف نے کہا کہ 2004ءمیں جب بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) دورہ پاکستان کیلئے ہچکچاہٹ کا شکار تھا تو اس وقت بھارتی ٹیم کے کپتان سارو گنگولی نے کردار ادا کرتے ہوئے بی سی سی آئی اور کھلاڑیوں کو اس دورے کیلئے آمادہ کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ سارو گنگولی اس وقت بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر ہیں اور وہ ایک مرتبہ پھر دونوں ممالک کے کرکٹ بورڈز کے درمیان منقطع ہو نے والے تعلقات بحال کرنے میں کردار ادا کر سکتے ہیں۔ اس کیساتھ ہی انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) وسیم خان سے دونوں ممالک کے درمیان باہمی سیریز کے انعقاد کیلئے اقدامات اٹھانے کا مطالبہ بھی کیا۔

انہوں نے کہا کہ سارو گنگولی کھلاڑی اور بی سی سی آئی کے صدر کے طور پر احسان مانی اور پی سی بی کی مدد کر سکتے ہیں کیونکہ جب تک دونوں کے درمیان کرکٹ تعلقات پوری طرح بحال نہیں ہو جاتے، دونوں ممالک کیلئے معاملات میں بہتری نہیں آ سکتی، دنیا پاکستان اور بھارت کو کرکٹ کھیلتے ہوئے دیکھنا چاہتی ہے، وسیم خان کو چاہئے کہ وہ بھی مزید اقدامات اٹھاتے ہوئے دیگر ممالک کی ٹیموں کے دورہ پاکستان کو یقینی بنائیں تاکہ پاکستان اور مقامی کھلاڑیوں کی مدد ہو سکے۔

مزید : کھیل


loading...