گزشتہ مالی سال اشیائے خورونوش میں56فیصداضافہ ہوا

گزشتہ مالی سال اشیائے خورونوش میں56فیصداضافہ ہوا

لاہور(کامرس رپورٹر) مالی سال2011-12 کے دوران عام استعمال اور کھانے پینے کی اشیاءکی قیمتوں میں تقریباً 56فیصدکا اضافہ دیکھا گیا ہے،دالیں بھی غریب آدمی کی پہنچ سے دور ہوگئی، وفاقی ادارہ شماریات کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق مالی سال 2011-12 کے دوران کھانے پینے کی اشیاءتیزی سے مہنگی ہوئیں ، اعدادوشمار کے مطابق عام آدمی کیلئے دال کا استعمال بھی مشکل ہوگیا ، زیرتبصرہ مدت کے دوران دالوں کی قیمت میں55.75فیصد اضافہ دیکھاگیا، اس کے علاوہ بیسن کی قیمت 46اعشاریہ 53 فیصد ، چنا 36 اعشاریہ 84 فی صد مہنگا ہوا ہے، تازہ پھل بھی غریب آدمی کی پہنچ سے دور ہوتے دیکھائی دیئے اور ان کی قیمت میں 30فی صد جبکہ پیاز کی قیمت 36 اعشاریہ 84فی صد بڑھ گئی ہے، اسی طرح شہد، چاول اور مشروبت کی قیمت میں اضافہ تقریبا 20 فی صد کے قریب رہا ہے۔ غذائی اجناس کے علاوہ دیگر عام استعمال کی اشیاءکی قیمتوں میں بھی اضافہ دیکھا گیا ہے اور گاڑیوں کے ٹیکس میں 48فی صد، درسی کتب 41 اعشاریہ 15 فی صد ، ایم بی بی ایس ڈاکٹروں کی فی 22اعشاریہ 58 فی صد بڑھ گئی ہے، حیران کن طور پر گزشتہ مالی سال کے دوران موبائل فونز کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے،

مزید : کامرس