بھارتی پولیس نے بازیاب کروائی گئی جسم فروش خاتون مخبر کو بطور تحفہ دیدی

بھارتی پولیس نے بازیاب کروائی گئی جسم فروش خاتون مخبر کو بطور تحفہ دیدی
بھارتی پولیس نے بازیاب کروائی گئی جسم فروش خاتون مخبر کو بطور تحفہ دیدی

  

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی پولیس خواتین کے ساتھ نارواں سلوک میں ویسے ہی دنیا بھر میں ’شہرت‘رکھتی ہے لیکن اب ان کا ایک اور مزید انتہائی شرمناک کارنامہ منظر عام پر آ گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق ممبئی پولیس نے جسم فروش خاتون کو بازیاب کروا کر بطور ’تحفہ‘اپنے مخبر کے حوالے کر دیا جس نے اسے بھی درندگی کا نشانہ بنا ڈالا۔ممبئی پولیس کی جانب سے بازایاب کرائے جانے کے بعد بھی وہ خاتون ان کی خواہشات اور رحم و کرم پر رہی ،اور اس کے ساتھ جنسی کارکن جیسا ہی سلوک کیا جاتا رہا۔چونابھٹی کے پولیس اہلکاروں کی جانب سے اس خاتون کو اپنے35سالہ راکیش جہا نامی مخبر کو تحفہ کے طور پر دیئے جانے کا واقعہ رپورٹ کیا گیاہے ۔

20گھنٹے کے بعد 20سالہ لڑکی دوبارہ پولیس سٹیشن گئی اور راکیش کیخلاف جنسی زیادتی کا مقدمہ درج کروایا ۔جن پولیس اہلکاروں کی جانب سے اس بیس سالہ لڑکی کو اپنے مخبر کو تحفے میں دیاگیا تھا وہ پولیس کیلئے جسم فروشی کے کاروبار سے متعلق مخبری کیا کرتاتھا ۔

خاتون کی جانب سے شکایت پر مقدمہ درج کر کے کاروائی کا آغاز کر دیا گیاہے جبکہ مخبر کو بھی حراست میں لے لیا گیاہے ۔

فوجداری وکیل عبدالوہاب خان نے کہاہے کہ پولیس کو سب سے پہلے راکیش جہا کیخلاف چوری کی کاروائی عمل میں لانی چاہیے کیونکہ اس نے ہوٹل میں مدعی کا پین اور پیپر چھین لیا ،اور اغوائے برائے تاوان کا مقدمہ درج ہونا چاہیے کیونکہ اس نے خاتون سے کہا کہ وہ اسے اپنے پولیس افسر سے ملوانے لے جارہاہے لیکن وہ اسے ہوٹ میں لے گیا اور اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ۔

مزید :

بین الاقوامی -