ظہیر عباس کا ایک سالہ عہد مکمل ، آئی سی سی کی صدارت سے سبکدوش

ظہیر عباس کا ایک سالہ عہد مکمل ، آئی سی سی کی صدارت سے سبکدوش

  

 لاہور( سپورٹس رپورٹر) پاکستان کے سابق ٹیسٹ کرکٹر ایشین بریڈ مین ظہیر عباس ایک سال کی معیاد پوری ہونے پر آئی سی سی کی صدارت سے سبکدوش ہوگئے ۔اس طرح عید الفطر سے چند روز قبل آئی سی سی کی صدارت سے علیحدگی کے بعد اب وہ سابق صدر آئی سی سی کہلائیں گے۔ ظہیر عباس کے بطور سٹائلش بلے باز کے 108فرسٹ کلاس سنچریوں اور 7500انٹر نیشنل رنز کے ریکارڈ سے ہی ان کے بہترین کرکٹ کیئرئر کا پتہ چلتا ہے ۔ظہیر عباس ایک مثالی کرکٹر ہیں جنھوں نے ہمیشہ کرکٹ کواپنی تکنیک ذاتی صلاحیتوں کی بناء پر اس کی صحیح سپرٹ میں کھیلا ہے ۔وہ کرکٹ کے عظیم کھیل کے سفیر ہیں ۔ ظہیر عبا س نے 1969سے لے کر 1985تک 78ٹیسٹ اور 62ون ڈے میچز کھیلے ہیں ۔وہ 1975,1983کے ورلڈ کپ میں بھی حصہ لے چکے ہیں اور 14ٹیسٹ میچز اور 13ون ڈے میچز میں بطور کپتان پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں ۔ظہیر عباس واحد ایشین بلے باز ہیں جو کہ فرسٹ کلاس کرکٹ میں سنچریوں کی سنچری بنا چکے ہیں ۔ظہیر عباس 1993 ء میں سری لنکا اور ویسٹ انڈیز کے مابین سری لنکا میں ہونے واے ایک ٹیسٹ اور تین ون ڈے میچز میں آئی سی سی کے میچ ریفری کے بھی فرائض سر انجام دے چکے ہیں۔ واضح رہے کہ پی سی بی نے آئی سی سی کی صدارت کیلئے سابق چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی کو نامزد کیا تھا لیکن ان کی معذرت کے بعد ظہیر عباس کو آئی سی سی کی صدارت کے لئے نامزد کر دیا گیاتھا اور گزشتہ روز ظہیر عباس ایک سالہ معیاد پوری ہونے پر آئی سی سی کی صدارت سے سبکدوش ہوگئے ۔آئی سی سی کے انگلینڈ میں ہونے والی سالانہ کانفرنس میں ظہیر عباس کی بطور آئی سی سی صدر خدمات کو خراج تحسین پیش کیا گیا ۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -