سروسز ہسپتال میں الیکٹرسٹی کی اپ گریڈیشن کیلئے فنڈزمنظور ہونے کے باوجود بہتری نہ آ سکی

سروسز ہسپتال میں الیکٹرسٹی کی اپ گریڈیشن کیلئے فنڈزمنظور ہونے کے باوجود ...

  

لاہور(خبرنگار) سروسز ہسپتال میں الیکٹرسٹی کی اپ گریڈیشن کے لئے ایک کروڑ 33 لاکھ روپے کے فنڈزمنظور ہونے کے باوجود ترسیلی نظام میں بہتری نہیں آ سکی ہے جس پر ہسپتال کے ملازمین نے مشیر صحت اور سیکرٹری صحت سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ سروسز ہسپتال کے ذرائع نے بتایا ہے کہ سال 2014ء میں سروسز ہسپتال میں الیکٹرسٹی کے نظام میں بہتری کے لئے ایک کروڑ 33 لاکھ روپے کے فنڈز منظور کیے گئے جوکہ ہسپتال کے مختلف شعبوں اور وارڈز میں بجلی کے ترسیلی نظام جس میں خستہ حال تاروں اور وائرنگ کی تبدیلی سمیت فیڈر سے مین لائن بچھائی جانے کا منصوبہ میں شامل تھا،اس منصوبہ کے تحت فیڈز سے مین لائن تو بچھائی گئی اور بجلی کا ڈبل سورس بھی حاصل کیا گیا ۔ اس حوالے سے اے ایم ایس اینڈ آر ڈاکٹر یحییٰ ملک اور سب انجینئر نوید احمد کا کہنا ہے کہ فنڈز کا غلط استعمال نہیں کیا گیا ۔ بجلی کے نظام کو اپ گریڈ کیا گیا ہے تاہم ہسپتال میں سسٹم اوورلوڈ ہے جس کی وجہ سے مسائل کا سامنا ہے مزید بہتری کے لئے کوششیں کی جا رہی ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -