عید قریب آتے ہی ، لاری اڈوں اور ہسپتالوں میں نوسر بازوں کے گروہ سرگرم

عید قریب آتے ہی ، لاری اڈوں اور ہسپتالوں میں نوسر بازوں کے گروہ سرگرم

  

لاہور(لیاقت کھرل)عیدالفطرقریب آتے ہی شہر کے مسافر اڈوں اور ہسپتالوں کی ایمرجنسی وارڈوں کے باہر نوسر بازوں اور جیب تراشوں کے مختلف گروہوں کے ارکان سرگرم، مسافر اڈوں پر رش بڑھنے پر جیب تراشوں نے لوٹ مار شروع کر دی ، وہاں مسافر اڈوں پر سادہ لوح افراد کو ٹکٹ اور سیٹ دلوانے اور ہسپتالوں کی ایمرجنسی اور آؤٹ ڈور وارڈز میں مریضوں کو چیک کروانے کا جھانسہ دیکر نوسربازوں نے جیبوں کا صفایا کرنا شروع کر رکھا ہے، تھانہ لاری اڈہ، نواں کوٹ، گارڈن ٹاؤن، گلبرگ، شاہدرہ، شیرا کوٹ ہنجر وال، چوہنگ اور نشتر کالونی کے تھانوں سمیت ہسپتالوں میں قائم پولیس چوکیوں کے اہلکاروں سے مبینہ رابطوں کے باعث واقعات بڑھنے لگے ہیں ’’پاکستان‘‘ سروے میں مسافر (پردیسی) اور مریضوں سمیت ان کے لواحقین پھٹ پڑے، اس موقع پر لاری اڈہ ، ڈائیوو اڈہ، نیازی اڈہ، راہبر اڈہ سمیت سکائی وے اڈہ پر نوسر باز اور جیب تراشوں کے خلاف مسافروں پر دیسیوں نے شکایتیں کیں جبکہ ہسپتالوں میں سروسز ہسپتال اور میؤ ہسپتال جناح ، چلڈرن سمیت جنرل ہسپتال کی ایمرجنسی وارڈوں کے باہر نوسر بازی کی وارداتوں کے خلاف شہری سراپاء احتجاج بنے ہوئے نظر آئے۔ اس موقع پر سروسز ہسپتال کی ایمرجنسی وارڈ میں زیر علاج مریض شاہد علی اور اس کے رشتے دار نور خان، انتظار حسین، نواب نے بتایا کہ وہ جڑانوالہ سے علاج معالجہ کے لئے آئے ہیں، گاڑی کھڑی کرتے ہی ایک نو سر باز نے علاج کے بہانے 21ہزار لوٹ لئے ، ہسپتال اور چوکی کے عملہ نے بے بسی کا اظہار کیا ہے، ہسپتال کے چوکی انچارج ملک شوکت علی کو درخواست دینے پر پولیس نے نوسر بازی کے جرم میں مقدمہ نمبر314درج تو کر لیا ہے، لیکن ہسپتال کا سکیورٹی عملہ اور پولیس 36گھنٹے گزر جانے کے باوجود نوسر باز کا سراغ نہیں لگا سکتی اس موقع پر کاہنہ سے آئے ہوئے عمر رسیدہ شخص فیاض احمد، اسحاق رحمانی اور خاتون سکینہ بی بی نے بھی نوسر بازوں کے ہاتھوں لٹنے کی شکایات کیں، جبکہ میؤ ہسپتال کی ایمرجنسی وارڈ میں بھی مریضوں اور ان کے لواحقین نے نوسربازوں کے ہاتھوں لٹ جانے کی شکایات کیں، اس موقع پر سروسز ہسپتال اور میؤہسپتال کی ایمرجنسی وارڈز کے پاس قائم پولیس چوکیوں کے انچارج ملک شوکت علی اور دیگر اہلکاروں کہنا تھا کہ عید کے موقع پر نوسر باز سرگرم ہو جاتے ہیں، آگے پیچھے اکا دکا واردات ہوتی ہے، جبکہ عید کے موقع پر روزانہ ایک آدھی واردات ہو رہی ہے ۔ اسی رطح لاری اڈہ کا سروے کرنے پر مسافروں نے بتایا کہ ایک نوسر باز کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کیا گیا ہے، پولیس نے اسے تھانہ لیجاتے ہی چھوڑ دیا ہے، اس موقع پر پردیسیوں کا کہنا تھا کہ نوسربازوں کے ساتھ جیب تراشوں نے بھی لوٹ مار کی انتہا کر دی ہے ۔ اس موقع پر اس بات کا انکشاف ہوا کہ متعلقہ تھانوں اور پولیس چوکیوں کے اہلکاروں کے ساتھ نوسر بازوں اور جیب تراشوں نے مبینہ طور پر رابطے قائم رکھے ہیں، جس کے باعث جیب تراشی اور نوسر بازی کے واقعات نے زور پکڑ لیا ہے اور جوں جوں عید قریب آ رہی ہے، ان واقعات میں تیزی آ رہی جبکہ پولیس اور سکیورٹی کے معاملات کی نگرانی کے لئے تعینات خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں اس حوالے سے محکمہ پولیس اور محکمہ صحت کے ترجمان کا الگ الگ اپنے بیان میں کہنا ہے کہ مسافروں اڈوں اور ہسپتالوں میں نوسر بازی اور جیب تراشی کی وارداتوں کی روک تھام کے لئے سپیشل سکواڈز قائم کر دیئے ہیں، جبکہ ڈی آئی جی ڈاکٹر حیدر اشرف کا کہنا ہے کہ مسافر اڈوں پر سکیورٹی اور چیکنگ کے نظام کو سخت کر دیا گیا ہے۔ متعلقہ تھانوں کے اہلکاروں کے مبینہ رابطوں کے بارے کسی قسم کی شکایات سامنے آنے پر سخت ایکشن لیا جائے گا۔ مختلف نوسرباز اور جیب تراش حراست میں بھی لئے گئے ہیں تاہم چیکنگ کے نظام کو مزید سخت کیا جانے کا حکم دے دیا گیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -