عید الفطر کے بعد بڑی عوامی تحریک شروع ہوگی،شاہ محمود قریشی

عید الفطر کے بعد بڑی عوامی تحریک شروع ہوگی،شاہ محمود قریشی

  

لاہور( اے این این )تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ’’احتساب بلاامتیاز ‘‘کے مطالبے پر عید الفطر کے بعد ایک بڑی عوامی تحریک شروع ہوگی ٗ حکمرانوں سمیت سب کو کڑے احتساب سے گزرنا پڑے گا ٗ پانامہ لیکس میں جس کا بھی نام شامل ہے تحقیقات ہونی چاہیے ٗ آغاز وزیراعظم اور انکے خاندان سے کیا جائے۔ایک انٹرویو کے دوران شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیراعظم کے احتساب کیلئے آخری حد تک جائیں گے،اب پیچھے نہیں ہٹیں گے ،عید کے بعد قانونی عدالت کے ساتھ عوامی عدالت میں بھی جائیں گے ۔یہ فیصلہ کن گھڑی ہے اگر اب ہم نے اس معاملے کو پس پشت ڈال دیا اور کرپشن کو ان دیکھا کردیا تو پھر یہ کبھی ختم نہیں ہوگی اور ہماری آنے والی نسلیں بھی غربت ، بے روزگاری اور لاقانونیت کی نظر ہوجائیں گی۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف اور ان کی حکومت پاناما پیپرز کی تحقیقات کے لئے ٹی او آرز سے اسی طرح ڈر رہی ہے جس طرح 4 حلقے کھولنے سے ڈر رہی تھی۔ لیکن اب راستہ نہیں ملے گا ۔پوری اپوزیشن اس مسئلے پر متحد ہے ۔ ہم سمجھتے ہیں کہ سب کا احتساب ہونا چاہیے جس کا بھی نام پانامہ پیپرز میں آیا ہے وہ کٹہرے میں کھڑا ہو۔انہوں نے کہا کہ عمران خان پہلے ہی خود کو احتساب کیلئے پیش کرچکے ہیں ۔ لیکن احتساب کا آغاز وزیر اعظم اور ان کے خاندان سے ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کی بیماری پر کوئی پوائنٹ سکورنگ نہیں کرنا چاہتے لیکن جس طرح امور مملکت چلائے گئے یا چلائے جارہے ہیں یہ غیر آئینی ہے ۔ وزیراعظم ایک ماہ سے زائد بیرون ملک ہیں اور ان کی غیر موجودگی میں ان کی صاحبزادی سرکاری افسران کے اجلاس بلا رہی ہیں آئین اس کی اجازت نہیں دیتا۔

مزید :

صفحہ اول -