سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں پانچ طلاقیں،یومیہ 122ہو نے لگیں

سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں پانچ طلاقیں،یومیہ 122ہو نے لگیں

  

ریاض(اے این این) سعودی عرب میں ہر گھنٹے میں پانچ طلاقیں ہو جاتی ہیں۔ایک چوتھائی شادیوں کا انجام طلاق ہے جن میں60فی صد طلاقیں شادی کے پہلے سال ہی ہو جاتی ہیں۔ شادی شدہ جوڑے ایک دوسرے کیموبائل فون کی جاسوسی کرتے ہیں ،اس سے بیس فی صد طلاقیں ہو رہی ہیں۔عرب ٹی وی نے سعودی عرب میں طلاق کی بڑھتی شرح پر اپنی رپورٹ میں لکھا کہ یومیہ 127طلاقوں کے کیسز سامنے آرہے ہیں،اس طرح ہر گھنٹے میں پانچ طلاقیں ہو جاتی ہیں۔سعودی عرب کے ادارہ شماریات کے جنرل اتھارٹی کی طرف سے ان اعدادو شمار کا انکشاف کیا گیا جس میں کہا گیا کہ گزشتہ برس سعودی عرب میں ایک لاکھ57ہزار شادیاں رجسٹرڈ ہوئیں اور اسی عرصے کے دوران 46ہزار طلاق کے کیسز ریکارڈ ہوئے۔رپورٹ میں بیان کیا گیا ہے ،2014کے مقابلے میں گزشتہ سال طلاقوں کی تعداد میں کمی دیکھی گئی ،2014میں54ہزار طلاقیں ہوئیں۔ مشرقی صوبے اور تبوک میں گزشتہ سال سب سے زیادہ طلاق کی شرح کو ریکارڈ کیا گیا جو بالترتیب36عشاریہ 7اور36عشاریہ ایک رہی۔ریاض میں طلاق کی شرح36فی صد ریکا رڈ کی گئی۔

پانچ طلاقیں

مزید :

صفحہ آخر -