استنبول دھماکوں میں ملوث 20مشتبہ جنگجو گرفتار

استنبول دھماکوں میں ملوث 20مشتبہ جنگجو گرفتار

  

انقرہ(آن لائن)ترکی کے صدر رجب طیب ایردوگا ن نے کہا ہے کہ استنبول شہر کے اتا ترک بین الاقوامی ہوائی اڈے پر دہشت گردی کی خونی کارروائیوں کے ملوث ہونے کے شبے میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامی’داعش‘ کے 20 مشتبہ جنگجوؤں کو حراست میں لیا گیا ہے جن سے پوچھ تاچھ جاری ہے۔ ترک ذرائع ابلاغ کے مطا بق ہوائی اڈے پرحملہ کرنے والے دہشت گردوں میں سے دو کے پاس روس کے پاسپورٹس تھے۔ دہشت گردوں کا تعلق شدت پسند تنظیم داعش کے ساتھ بتایا گیا اور ایک چیچن جنگجو کو اس واقعے کا ماسٹر مائینڈ بتایا گیاہے۔ ادھر صدر ایردوگا ن نے جائے وقوعہ کے دورے کے دوران صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ تازہ ترین پیش رفت یہ ہے کہ استنبول دہشت گردی میں داعش کے ملوث ہونے کا قوی امکان ہے۔

ترک ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ ہوائی اڈے پردھماکوں میں ملوث ایک دہشت گرد کا تعلق چیچنیا سے تھا جس کی شناخت عثمان فادینوف کے نام سے کی گئی ہے۔ اس کے بارے میں یہ معلومات استنبول میں مکان کرائے پر دینے والے ایک ایجنٹ کے دفتر سے ملی ہیں۔ ترک پولیس کا کہنا ہے کہ تینوں حملہ آوروں کے پاس روسی پاسپورٹس بھی تھے۔ ترک سیکیورٹی ادارے اس خونی واردات کے مختلف پہلوؤں پر تحقیق کر رہے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -