سردارذوالفقارعلی کا ساتھیوں سمیت پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان

سردارذوالفقارعلی کا ساتھیوں سمیت پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)آزاد کشمیرکے عام انتخابات کے لیے سندھ اوربلوچستان میں سیاسی جماعتوں نے صف بندی شروع کردی ہے،تحریک انصاف آزاد کشمیرسندھ زون کے سردارذوالفقارعلی نے ساتھیوں سمیت پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا ہے ،سینیٹ میں پیپلزپارٹی کے پارلیمانی لیڈرسینیٹرسعید غنی نے الزام عائد کیا ہے کہ وفاقی حکومت گلگت بلتستان کی طرح آزاد کشمیرکے انتخابات کوبھی ہائی جیک کرنے کی کوشش کررہی ہے انہوں نے خبردارکیا کہ اگروفاقی حکومت نے دھاندلی کے ذریعہ آزاد کشمیرانتخابات میں برتری مارنے کی کوشش کی تو پیپلزپارٹی سخت ردعمل دے گی۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے پیپلزمیڈیا سیل کراچی میں کشمیری رہنماؤں کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر وزیراعلی سندھ کے مشیرراشد ربانی ، پی پی رہنما نجمی عالم ، ایم این اے ڈاکٹرشاہدہ رحمانی پیپلزپارٹی آزاد کشمیرسندھ زون کے صدر اورپارٹی کے نامزد امیدوارچوہدری میرحیدردیگررہنما قاضی بشیراحمد،قاری اسماعیل دیگربھی موجود تھے۔ پی ٹی آئی سندھ زون کے صدرسردارذوالفقارعلی نے اپنے ساتھیوں ندیم اعوان، صادق سدوزئی ، سردارنوید اوررب نوازدرانی کے ہمراہ پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا ۔ سینیٹرسعید غنی کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی کے ٹکٹ پرمنتخب ہونے والے کسی امیدوارنے پیپلزپارٹی کوچھوڑکرکسی دوسری پارٹی میں شمولیت اختیارنہیں کی۔ پیپلزپارٹی آزاد کشمیرمیں کسی پارٹی سے الائنس کے بغیرانتخابات میں حصہ لے رہی ہے اس کے مقابلے میں باقی تمام جماعتوں نے الائنس بناکرانتخابات میں حصہ لیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت اربوں روپے خرچ کرکے کشمیرکے عام انتخابات پراثراندازہونے کی کوشش کررہی ہے آزاد کشمیرانتخابات کوطاقت کے بل بوتے پرہائی جیک کرنے کی کوشش کی گئی تو وفاقی حکومت کو پیپلزپارٹی کے سخت ردعمل کا سامنا کرنا پڑے گا۔ سینیٹرسعید غنی کا کہنا تھا کہ الیکشن شیڈول کے اعلان کے باوجود آزاد کشمیرمیں ترقیاتی کام جاری ہیں الیکشن کمیشن اورکشمیرکونسل کوانتخابی ضابطہ اخلاق کی خلا ف ورزی کا نوٹس لینا چاہیئے، انہوں نے کہاکہ پاکستان ٹیلیوژن بھی آزاد کشمیرانتخابات میں فریق کا کردارادا کررہا ہے اورمسلم لیگ نون کی انتخابی مہم چلارہا ہے اگرپی ٹی وی نے اپنا رویہ ترک نہ کیا تو سینٹ میں جواب طلبی کریں گے ۔ ایک سوال کے جواب میں سینیٹرسعید غنی کا کہنا تھا کہ پچھلے چھیاسٹھ برس میں کشمیر میں ایک بھی میڈیکل کالج قائم نہیں کیا گیا ۔پیپلزپارٹی کی حکومت نے تین میڈیکل کالج قائم کرکے انہیں فعال کیا اورتعلیم وصحت کے میدان میں کئی منصوبے مکمل کیے۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی قیادت پرکرپشن کے الزامات عائد کرنے والے وزیراعلی پنجاب کوشرم آنی چاہیے وہ دوسروں پرانگلی اٹھانے سے پہلے شریف برادران کے خلاف اسحق ڈارکے منی لانڈرنگ سے متعلق بیان کا جواب دیں ۔ انہوں نے کہاکہ نون لیگ نے ماضی میں جومقدمات قائم کیے وہ جھوٹے ثابت ہوئے اگرپیپلزپارٹی کی قیادت پرنئے مقدمات بنائے گئے تو ماضی کی طرح نئے مقدمات کا بھی عدالتوں میں سامنا کریں گے۔انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کے کسی لیڈر نے شریف برادران کی طرح کبھی ججز کو ٹیلی فو ن کرکے دباوٗ کے ذریعے آج تک عدالتی فیصلے نہیں لئے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -