29جون کو ہماری برانچز صارفین کی خدمت میں مصروفِ عمل رہیں

29جون کو ہماری برانچز صارفین کی خدمت میں مصروفِ عمل رہیں

  

کراچی (پ ر)نیشنل بینک انتہائی دُکھ کا اظہار کرتا ہے کہ اس کے باوجودکہ 29جون 2016ء رات 08:00بجے تک ہماری برانچز صارفین کی خدمت میں مصروفِ عمل رہیں اور یہ سلسلہ 30جون 2016ء کی نصف شب تک جاری رہا اور 100ارب روپے سے زائد کی لاکھوں ٹرانزیکشنز عمل میں آئیں، کچھ اخبارات میں ایسی رپورٹس شائع کردی گئیں جو قطعاً درست نہیں ہیں اور اس سے بینک کی منفی تصویر کشی کی گئی۔اس سلسلے میں ہم اپنے صارفین کے مفاد میں یقیناًدرست تصویر پیش کرنا چاہیں گے۔ مورخہ 02جولائی 2016ء کو ہماری تمام برانچز صبح 08:00بجے کھول دی گئیں لیکن سسٹم کی دستیابی میں تاخیر کے سبب جو گزشتہ دنوں کی کے غیرمعمولی حجم کی لین دین اور دن بھر طویل تر کارروائی کا نتیجہ تھا ، برانچز صارفین کے کچھ حصّے کی خدمات کی بجاآوری کرسکیں ۔ کچھ اخباری رپورٹس کے برعکس ہمارے ہاں کوئی سسٹم بریک ڈاؤن نہیں تھا اور ہماری ATMsپوری طرح فعال تھیں اور ڈھائی لاکھ ٹرانزیکشنز سے زائد پر عمل درآمد بھی کیا گیا۔ اس کے علاوہ بینک انتظامیہ نے ایسے انتظامات کر رکھے تھے کہ این بی پی کی برانچز مورخہ 02جولائی 2016ء کی رات گئے تک کھلی رکھی جائیں۔ اس کے نتیجے میں بینک نے دوپہر ہی میں تمام صارفین کو خدمات کی فراہمی کا آغاز کردیا تھا اور یہ سلسلہ آخری صارف جس میں پاکستان بھر سے ہمارے قابلِ قدر پنشنرز اور تنخواہ دار افرادبھی شامل تھے تک جاری رہا۔ تاہم ، ہمیں صارفین کو پہنچنے والی کسی بھی تکلیف کا افسوس ہے اور ہم اپنے ممکنہ بہترین خدمات کی فراہمی کے عزم کی یقین دہانی کرواتے ہیں۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -