اویس شاہ اغواءمعاملہ، سپریم کورٹ کا ایس ایس پی ساﺅتھ کو فوری ہٹانے کا حکم

اویس شاہ اغواءمعاملہ، سپریم کورٹ کا ایس ایس پی ساﺅتھ کو فوری ہٹانے کا حکم
اویس شاہ اغواءمعاملہ، سپریم کورٹ کا ایس ایس پی ساﺅتھ کو فوری ہٹانے کا حکم

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کے بیٹے کے اغواءکے معاملے پر ایس ایس پی ساﺅتھ کو فوری طور پر ہٹانے کا حکم دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر حکومت نے انہیں نہ ہٹایا تو پھر عدالت حکم جاری کرے گی۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

میڈیا رپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ میں کراچی بدامنی کیس کی سماعت ہوئی جس دوران ایس ایس پی ساﺅتھ، چیف سیکرٹری سندھ اور دیگر متعلقہ حکام عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے ایس ایس پی ساﺅتھ سے سوال کیا کہ آپ کو اویس شاہ کے اغواءکا کب پتہ چلا اور کارروائی کب کی گئی جس پر انہوں نے جواب دیا کہ انہیں شام سوا سات بجے اطلاع ملی جس کے بعد کارروائی کی گئی۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

جسٹس امیر ہانی مسلم نے ریمارکس دئیے کہ اویس شاہ کے اغواءسے متعلق ایس ایچ او کو پتہ چلا تو انہوں نے کہہ دیا کہ ایجنسیوں سے اٹھا لیا ہو گا۔ عدالت نے قرار دیا کہ ایس ایس پی نے اویس شاہ کے اغواءمیں معاونت کی ہے جو نااہلی ہے۔ انہوں نے چیف سیکرٹری سے استفسار کیا کہ یہ شخص ابھی تک وردی میں کیوں ہے؟ عدالت نے ایس ایس پی ساﺅتھ کو فوری طور پر ہٹانے کا حکم جاری کرتے ہوئے کہا کہ اگر حکومت نے انہیں نہ ہٹایا تو پھر عدالت حکم جاری کرے گی۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -