لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں انجیوگرافی کی مشینیں خراب، مریض باہر سے انجیو گرافی کرانے پر مجبور

لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں انجیوگرافی کی مشینیں خراب، مریض باہر سے انجیو گرافی ...
لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں انجیوگرافی کی مشینیں خراب، مریض باہر سے انجیو گرافی کرانے پر مجبور

  

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں انجیو گرافی کی مشینیں خراب ہونے کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جو نجی لیبارٹریز میں بھاری معاوضے کے عوض انجیو گرافی کرانے پر مجبور ہیں۔

ذرائع کے مطابق خیبرپختونخواہ، فاٹا اور افغانستان سے روزانہ سینکڑوں افراد علاج کرانے کیلئے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں آتے ہیں لیکن یہاں انجیوگرافی کی تمام مشینیں کئی ماہ سے خراب ہونے کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے اور باہر سے انجیوگرافی کرانے پر مجبور ہیں۔ ذرائع کے مطابق لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں انجیو گرافی 12 ہزار روپے میں ہوتی ہے جبکہ باہر سے 25 ہزار روپے میں ہو رہی ہے۔ ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ہسپتال کی ضرورت کے مطابق انجیو گرافی کی نئی مشینیں خرید لی گئی ہیں تاہم انہیں لگانے میں وقت لگ رہا ہے۔

مزید :

پشاور -