بنگلہ دیش حملہ، تمام مسلمانوں کو جانے دیا گیا لیکن صرف ایک مسلمان مارا گیا، وجہ ایسی کہ جان کر آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں گی

بنگلہ دیش حملہ، تمام مسلمانوں کو جانے دیا گیا لیکن صرف ایک مسلمان مارا گیا، ...
بنگلہ دیش حملہ، تمام مسلمانوں کو جانے دیا گیا لیکن صرف ایک مسلمان مارا گیا، وجہ ایسی کہ جان کر آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں گی

  

ڈھاکہ (مانیٹرنگ ڈیسک) بنگلہ دیشی دارالحکومت کے ایک کیفے میں یرغمال بنا کر ہلاک کئے جانے والے 20 افراد میں ایک ایسا مسلمان طالبعلم بھی شامل تھا کہ جس نے اپنے غیر مسلم ساتھیوں کے لئے اپنی جان قربان کردی۔

اخبار دی انڈی پینڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق فراز حسین نامی بنگلہ دیشی طالبعلم امریکا کی ایمری یونیورسٹی میں زیر تعلیم تھا۔ وہ کیفے میں اپنے کچھ غیر ملکی دوستوں کے ساتھ موجود تھا کہ دہشتگرد وہاں آن پہنچے۔ رپورٹ کے مطابق دہشتگردوں نے فراز حسین اور اس کے ساتھ موجود حجاب پوش خواتین کو نکل جانے کا موقع دیا لیکن جب ان کے ساتھ آنے والی مغربی لباس میں ملبوس لڑکیوں کو دہشتگردوں نے روک لیا تو فراز حسین نے بھی باہر جانے سے انکار کردیا۔

امریکہ کا سب سے خطرناک ہتھیار اس کے سب سے بڑے دشمن ملک کے ہاتھ لگ گیا، مگر کیسے؟ جواب ایسا کہ امریکی فوج بھی چکراگئی

فراز حسین کے بھانجے حیشان نے بتایا کہ دہشت گردوں نے ان کے ماموں کو جان بچانے کا موقع دیتے ہوئے کیفے سے نکل جانے کو کہا لیکن انہوں نے اپنے غیر ملکی ساتھیوں کو موت کے حوالے کرکے اپنی جان بچانے سے انکار کردیا۔ درندہ صفت دہشت گردوں نے 19 دیگر افراد کے ساتھ فراز حسین کو بھی گولیوں سے چھلنی کرڈالا۔

اس حملے میں ایک بھارتی طالبعلم، 9 اطالوی شہری اور فلاحی تنظیموں کے لئے کام کرنے والے سات جاپانی شہریوں کو بھی بے دردی سے قتل کردیا گیا۔

مزید :

بین الاقوامی -