افغان جنگجوؤں کو ایک امریکی فوجی کے قتل پر ایک لاکھ ڈالر ادا کئے گئے، امریکی اخبار کا دعویٰ

        افغان جنگجوؤں کو ایک امریکی فوجی کے قتل پر ایک لاکھ ڈالر ادا کئے گئے، ...

  

واشنگٹن(این این آئی) امریکی اخبار نے افغان حکام کے حوالے سے انکشاف کیا ہے کہ روسی خفیہ ایجنسی نے افغان عسکریت پسندوں کو ایک امریکی یا اتحادی فوجی کو قتل کرنے کے بدلے ایک لاکھ ڈالر تک کی پیشکش کی تھی۔ اس معاملے میں ایک افغان سمگلر مڈل مین کا کردار ادا کررہا تھا۔میڈیارپورٹس کے مطابق واشنگٹن ڈی سی میں سی آئی اے کی ڈائریکٹر جینا ہیسپیل اور نیشنل سیکورٹی ایجنسی کے ڈائریکٹر پال نیکاسون نے کانگریس کے آٹھ اہم ارکان سے ملاقات کی۔ یہ پہلا موقع تھا کہ قانون سازوں کو انٹیلی جنس حکام سے براہ راست مبینہ روسی منصوبے کے بارے میں سننے کا موقع ملا۔ ادھر غزنی کے طالبان کمانڈر مولانا بغدادی نے بتایا کہ انفرادی طور پر کمانڈرز روسی انٹیلی جنس سے رقوم اور ہتھیار لیتے رہے ہیں۔ یہ جرائم پیشہ گروہ ہیں جن کی وجہ سے ہماری ساکھ خراب ہوتی ہے۔امریکی انٹیلی جنس حکام سمجھتے ہیں کہ مبینہ منصوبہ روس کی خفیہ ایجنسی جی آر یو کے یونٹ 29155 کا تھا جو بیرون ملک قتل اور دوسرے کام کرنے کا ذمے دار ہے۔کانگریس کو اس ہفتے فراہم کی گئی دستاویزات میں لاکھوں ڈالر کی ادائیگیوں کا ذکر ہے اور ان میں سے کئی عزیزی کو کی گئیں۔ افغان حکام کا کہنا تھاکہ امریکی اور اتحادی اہداف کو نشانہ بنانے پر ہر فوجی کی ہلاکت پر ایک لاکھ ڈالر تک کی پیش کی گئی۔

ڈالر،قتل

مزید :

صفحہ آخر -