ٹرانسپورٹ کے مربوط نظام کی ضرورت ہے، وفاقی چیمبر

  ٹرانسپورٹ کے مربوط نظام کی ضرورت ہے، وفاقی چیمبر

  

لاہور(لیڈی رپورٹر) ٹرانسپورٹ کے مؤثر اور مربوط نظام کی ضرورت ہے، اس سے خطہ کے ممالک میں تجارت کے سفری اخراجات کو کم کرنے کے ساتھ ساتھ مسابقت کو فروغ جبکہ دیگر باہمی تجارت میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔ اقتصادی تعاون تنظیم (ای سی او) کے ایوانہائے صنعت و تجارت (ای سی او۔سی سی آئی) کی خصوصی کمیٹی برائے ٹرانسپورٹ کے اجلاس کے دوران ایف پی سی سی آئی کے نائب صدر شیخ سلطان رحمن نے کہا ہے کہ ای سی او کے رکن ممالک کے درمیان ٹرانسپورٹ کے مؤثر اور مربوط نظام کی ضرورت ہے جس سے تجارت کے سفری اخراجات میں کمی کے ساتھ علاوہ مسابقت کے فروغ سے خطہ کے ممالک کی تجارت میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وسطی ایشیاء کے ممالک کی حکومتوں کو اس مقصد کیلئے کام کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ریلویز کے موجودہ نیٹ ورک میں معمولی بہتری کے ساتھ اسلام آباد، تہران، استنبول (آئی ٹی آئی) کارگو ٹرین پراجیکٹ کا آغاز کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے ای سی او رکن ممالک پر زور دیا کہ ای سی او ٹرانزٹ ٹرانسپورٹ فریم ورک ایگریمنٹ (ٹی ٹی ایف اے) پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے جس سے ٹرانسپورٹ کے اخراجات میں نمایاں کمی لائی جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی ٹی ایف اے کی مدد سے تجارتی سامان اور مسافروں کی آمدورفت میں بہتری، کارگو کے تحفظ، ٹرانزٹ ٹرانسپورٹ کے عمل میں غیر ضروری تاخیر کے مسائل، کسٹمز کی بے ضابطگیاں اور ٹیکس چوری سمیت دیگر مشکلات کے خاتمہ سے خطہ کی تجارت میں خاطر خواہ اضافہ کیا جا سکتا ہے۔۔جس سے علاقائی ترقی اور خوشحالی کے اہداف کے حصول میں مدد ملے گی۔

مزید :

کامرس -