جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ عوام کے مسائل کاحل نہیں، ذیشان گورمانی

جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ عوام کے مسائل کاحل نہیں، ذیشان گورمانی

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)سابق رکن صوبائی اسمبلی محمدذیشان گورمانی نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب سیکریٹریٹ عوام کے مسائل کا حل نہیں، اس سے مشکلات تو شاید کم ہوسکتی(بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

ہیں مگر اصل ہدف الگ صوبہ کا قیام ہے جس سے جنوبی پنجاب کے لوگوں کا احساس محرومی ختم کیا جا سکتا ہے، سیاسی اتحاد کی باتیں قبل ازوقت ہیں،نہ ہی الیکشن کا ماحول ہے اور نہ ہی سیاست کیلئے ملکی حالات سازگار ہیں، انشائاللہ وقت آنے پر عوامی خواہشات کے مطابق اور عوامی مشاورت سے ہی تمام فیصلے کریں گے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیاکے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ وطن عزیز اس وقت کرونا وائرس جیسی مہلک بیماری سے دوچار ہے،اس وقت نہ ہی الیکشن کا ماحول ہے اور نہ ہی سیاست کیلئے ملکی حالات سازگار ہیں، یہ وقت عوام کو اس مشکل حالات سے بچانے اور عوام کی تکالیف دور کرنے کا ہے، اس مشکل حالات میں عوام کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں،انہوں نے کہا کہ اتحاد کی باتیں قبل ازوقت ہیں،وہ ڈرائنگ روم کی سیاست کے قائل نہیں،سیاست کا آغاز ہی ہم نے عوامی فیصلے عوام میں کرنے سے کیاتھا،سیاسی اتحاد اور سیاست کا وقت ہوتا ہے، انشائاللہ وقت آنے پر عوامی خواہشات کے مطابق اور عوامی مشاورت کے ساتھ ہی این اے 183 پی پی 278اورپی پی 277 میں عوامی مقبولیت کے مضبوط اتحاد کے ساتھ اپنا بھرپور سیاسی کردار ادا کریں گے، فی الحال تمام افواہوں اور اتحاد کی باتوں میں کوئی حقیقت نہیں،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب سیکریٹریٹ عوام کے مسائل کا حل نہیں، اس سے مشکلات تو شاید کم ہوسکتی ہیں مگر اصل ہدف الگ صوبہ کا قیام ہے جس سے جنوبی پنجاب کے لوگوں کا احساس محرومی ختم کیا جا سکتا ہے، سیاسی طور پر فائدہ حاصل کرنے کیلئے جمہوری حکومتیں اس طرح کے فیصلے پہلے بھی کئی بار کرتی رہی ہیں مگر جنوبی پنجاب کے لوگوں کیلئے الگ صوبہ کا وعدہ حکومت کو پورا کرنا ہوگا۔

ذیشان گورمانی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -