گرین پاکستان مہم: سینکڑوں پودے خشک،حکومت کو بھاری نقصان

  گرین پاکستان مہم: سینکڑوں پودے خشک،حکومت کو بھاری نقصان

  

کوٹ ادو (تحصیل رپورٹر) محکمہ ایریگیشن کی غفلت ودعدم توجہی،تونسہ بیراج کے کنارے پر گرین اینڈ کلین پاکستان کے تحت خطیر رقم سے لگائے جانے والے پودوں کی دیکھ بھال نہ ہونے سے سینکڑوں پودے مرجھا گئے،4ماہ قبل وزیر مملکت ماحولیات زرتاج گل نے کلین اینڈ گرین مہم کے تحت8 ہزار پودے لگا کر شجرکاری مہم کا افتتاح کیا تھا،وزیراعظم عمران خان کے ویژن اورملک کو سرسبز و شاداب اور آلودگی سے پاک کرنے کے لئے گرین پاکستان مہم کا اغاز کیا گیا تھا(بقیہ نمبر39صفحہ7پر)

جس کے تحت وزیر مملکت ماحولیات زرتاج گل نے 28فروری کوکلین اینڈ گرین مہم کے تحت دریائے سندھ تونسہ بیراج 22 والی پل پر 8 ہزار پودے لگا کر مہم کا افتتاح کیا تھا اور محکمہ اریگیشن کو مزید پودے لگانیکی ذمہ داری بھی سونپی گئی تھی،محکمہ اریگیشن نے اس مہم کے تحت تونسہ بیراج کے مشرقی کنارہ سے نکلنے والی ٹی پی لنک کینال کے قریب چند کنال کے پلاٹ پر گرین اینڈ کلین پاکستان مہم کے تحت مختلف قسم کے درختوں کے پودے لگائے تھے اور سرکاری خزانے کی خطیر رقم خرچ کی گئی تھی،صرف چند ہفتے تک ان پودوں کو دیکھ بھال اور پانی لگاتے رہے تھے جب پودے بھڑنا شروع ہوئے تو ان کو مال مویشیوں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیاگیا تھا، اب چند کنال کا وہ پلاٹ پانی نہ ملنے سے خشک سالی کا منظر پیش کر رہا ہے جو کہ محکمہ انہار تونسہ بیراج کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے اور مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے سینکڑوں پودے مرجھا گئے ہیں جس سے حکومتی خزانے کا لاکھوں روپے کا نقصان پہنچایا گیا ہے،مشرقی کنارہ پلاٹ کے نزدیک راجہ فش پوائنٹ اینڈ ڈرنک کارنر کے عملے نے پودوں کے چند لائنوں کو اپنی مدد آپ کے تحت پانی لگاتے رہے اور دیکھ بھال کرتے رہے جو کہ آج راجہ فش پوائنٹ کے نزدیک جو پودے ہیں ان کی دیکھ بھال کرنے سے سر سبز ہرے بھرے اور خوبصورتی کا منظر پیش کر رہے ہیں،اس حوالے سے تونسہ بیراج پر آنے والے وزٹر اور سماجی کارکن خادم حسین کھر، محمد بلال، عبدالغفور وٹو، محمد جہانگیر خان چانڈیہ اور مقامی افراد کا کہنا ہے کہ محکمہ انہار تونسہ بیراج کا ہی دفتر چند قدم کے فاصلے پر موجود ہے، ان کو چاہئے کہ ان پودوں کی دوبارہ دیکھ بھال کے لئے اقدامات کئے جائیں تاکہ وزیراعظم عمران خان کے ویژن اورملک کو سرسبز و شاداب اور آلودگی سے پاک کرنے کے لئے گرین اینڈ کلین پاکستان مہم کو کامیاب بنایا جا سکے۔

نقصان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -