سکول ٹیچر قتل، بھائی کی طرفَ سے تحقیقات کیلئے جوڈیشل مجسٹریٹ کو درخواست

      سکول ٹیچر قتل، بھائی کی طرفَ سے تحقیقات کیلئے جوڈیشل مجسٹریٹ کو درخواست

  

حاصل پور(نمائندہ پاکستان) حاصل پور کے غریب محلہ نزد دربا ر محمد شا ہ رنگیلہ چند روز قبل متو فیہ مسر ت بی بی سر کا ری سکول ٹیچر تین بچوں کی ما ں اللہ کو پیا ری ہو گئی۔بتایا گیا (بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

ہے کہ مسر ت بی بی اپنے بچون اور بو ڑھے والدین کی خدمت گزار تھی جس کی 26.12.2013 کو محمد عارف ولد محمد بدر دین سے نکا ح ہوا تھا۔جس کے دو بچے سعدیہ عا رف عمر 4 سال اور محمد بن عا رف عمر 2 سال ہے۔مسرت بی بی کے پہلے شوہر محمد حذیفہ کا ایک بیٹا ہے جس کی وجہ سے گھر میں دو نوں میا ں بیوی کے درمیا ن جھگڑا رہتا تھا۔ مسرت بی بی کے بھا ئی محمد بلال کے بقوں محمد عارف ہما ری ہمشیرہ کو اکثر قتل کی دھکمیا ں بھی دیتا تھا۔آخر کا ر 20.6.2020 کو مسرت بی بی اللہ کو پیا ری ہو گئی۔ متو فیہ مسرت بی بی کا شا م 4:30 بجے نما ز جنا زے اد ا کیا گیا۔ور ثا کے مطابق مسرت بی بی کے چہرے پر سیا ہ دا غ،نا ک اور کا نو ں سے خون بہہ رہا تھا اور منہ سے جھا گ نکلی ہو ئی سہی تھی جس کی بنا پر ہمیں شک گزرا کہ ہما ری بہن کو زہریلی چیز دے کر یا سانس بند کرکے قتل گیا ہے اسی لیے محمد عارف میت کوجلد دفنانے کی کو شش کی جا ئے۔جب ہم نے پو لیس کو بتا نے کی کوشش کی تو محمد عارف اور برا در حقیقی اور والد مشتعل ہو گئے اور جا ن سے ما رنے کی دھمکیاں دینے لگے کہ متو فیہ ان کی ذمہ دا ری ہے اور وہ میت کی بے حرمتی نہیں ہو نے دیں گے لہذا محمد عا رف نے انتہا ئی برق رفتا ری سے میت کو دفن کر وا دیا۔محمد بلال کا کہنا ہے کہ ہما ری مشیرہ کی قبر کشائی کر وا کے اس کا پو سٹ ما ٹم کروا یا جا ئے تا کہ متو فیہ کی فوتکی کی وجہ معلو م ہو سکے جبکہ محمد عا رف نے ٹیلی فو ن میڈیا موقف دیتے ہو ئے کہا کہ جو میڈیا نے کرنا ہے وہ کر لے اور جو میرے سسرال والوں نے کرنا ہے وہ کر لیں میں نے کسی کو نہیں ما را میں کسی سے نہیں ڈرتا۔

درخواست

مزید :

ملتان صفحہ آخر -