ملتان سیوریج منصوبہ کیلئے 2ارب 80کروڑ کی گرانٹ منظور، جنوبی پنجاب کی ترقی اولین ترجیح: شاہ محمود

    ملتان سیوریج منصوبہ کیلئے 2ارب 80کروڑ کی گرانٹ منظور، جنوبی پنجاب کی ترقی ...

  

ملتان (نیوز رپورٹر) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ملتان سیوریج منصوبہ کے لیے حکومت جاپان نے 2ارب 80کروڑ کی گرانٹ منظور کرلی ہے جس سے شہر کے سیوریج اور واٹر سپلائی نظام میں بہتری آئے گی غلہ گودام کی جگہ پر کابینہ نے ہسپتال بنانے کی بھی منظوری دے دی ہے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے لیے عملی اقدامات سے صوبہ بنانے کے عمل میں مثبت پیش رفت ہو گی حکومت نے پنجاب اور (بقیہ نمبر14صفحہ6پر)

کے پی کے میں وفاق کی طرز پر صوبائی مالیاتی ایوارڈ کا اجراء کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت دونوں صوبوں کے اضلاع میں پسماندگی کے اعتبار سے ترقیاتی فنڈذ جاری ہوں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے باب القریش میں ملتان کی مختلف تاجر تنظیموں کے وفد سے ملاقات میں اسلام آباد سے بزریعہ وڈیو لنک خطاب کرتے ہوئے کیا جس کی قیادت صدر جنوبی پنجاب ملک نیاز محمد بھٹہ نے کی وفد میں حفیظ اللہ خان،قمر زمان خان وزیر،ملک عمران بھٹہ،ملک آصف نعیم بھٹہ،خانزادہ خان محمد،محمد مدنی،ناصر محمود،اکمل خان بلوچ،سرفراز قادری،سید جبران بخاری،محمد اعجاز بھٹی،عمران راجپوت،محمد شریف دیگر شامل تھے تاجروں نے شاہ محمود قریشی کو واسا،سڑکات کی تعمیر،پارکس بنانے اور پولیس سے متعلقہ شکایات تجاویز اور مسائل سے آگاہ کیا جنہیں سن کر انہوں نے حل کے لیے اقدامات کی یقین دہانی کرائی اور خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت جنوبی پنجاب کی ترقی مسائل کے حل کے لیے ممکنہ اقدامات کررہی ہے سیکرٹریٹ کے لیے ایڈیشنل افیسران کی تعنیاتی صوبہ بنانے کی طرف اہم پیش رفت ہے اس سے ملتان بہاولپور ڈیرہ غازی خان کے لوگوں کو پولیس،انہار،مال،تعلیم،صحت کے کاموں مسائل کے حل کے لیے لاہور نہیں جانا پڑے گا ملتان میں صحت کے حوالہ سے سہولیات میں اضافہ ہو رہا ہے اس سلسلہ میں وفاقی کابینہ نے غلہ گودام ملتان کو ہسپتال بنانے کی منظوری دے دی ہے انہوں نے کہا کہ جاپان حکومت کی جانب سے 2ارب 80کروڑ کی گرانٹ جو ناقابل واپسی ہے منظور ہو چکی ہے جس سے واسا کے بوسیدہ پرانے پائپ تبدیل ہوں گے جس سے سیوریج کا پانی نہر میں نہیں ڈالا جا سکے گا اور اس نئے کام سے ملتان کا سیوریج کا مسئلہ 30سال کے لیے حل ہو جائے گا انہوں نے تاجروں کی جانب سے ہفتہ اتوار کو لاک ڈاؤن ختم کرنے کے حوالہ سے کہا کہ ایس او پیز عوام اور تاجروں کی حفاظت کے لیے بنائے گئے ہیں ان پر عمل کرنے سے حکومت کی نہیں عوام کی کورونا وباء سے حفاظت ہو گی تاہم رواں ماہ جولائی میں کورونا کیسز میں اگر کمی آئی تو حکومت لاک ڈاؤن ختم کرنے بارے فیصلہ کرے گی اگر زیادہ ہوا تو لاک ڈاؤن میں سختی کی جائے گی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -