ہارون آباد: مضر صحت پانی استعمال کرنے سے شہریوں پربیماریوں کاحملہ

  ہارون آباد: مضر صحت پانی استعمال کرنے سے شہریوں پربیماریوں کاحملہ

  

ہارون آباد (نامہ نگار)ہارون آباد شہر کی بڑی آبادی آج بھی پینے کے صاف پانی سے محروم ہے۔ مضر صحت پانی کے استعمال سے کئی شہری اپنی قیمتی زندگیاں گنوا بیٹھے ہیں جبکہ شہریوں کی بڑی تعداد مضر صحت اور آلودہ پانی پینے کے باعث جگر، ہیپاٹائٹس بی، سی اور پیٹ جیسے موذی مرض میں تیزی سے مبتلا ہورہے ہیں۔ شہری علاقے بلدیہ کالونی، ٹبہ نور پورہ، ٹبہ شرقیہ، مدینہ کالونی، حسین کالونی، الوقار کالونی، خان کالونی، مسلم کالونی سمیت متعدد علاقے کے عوام پینے (بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

کے صاف پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں، منتخب عوامی نمائندوں اور نتظامیہ کی عدم توجہ کے باعث ہارون آباد کا 70 فصد پینے کا پانی قابل استعمال نہیں رہا۔ شہریوں محمد یونس، آصف، جاوید، اقبال، حارث و دیگر نے صحافیوں کو بتایا کہ ہمیں پینے کے صاف پانی کے حصول میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ہمارے علاقوں کا پینے کا پانی قابل استعمال نہیں ہے، حکومتی نمائندوں اور نتظامیہ نے خاموشی اختیار کر رکھی ہے، شہریوں نے حکومتی نمائندوں سمیت تمام اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرے تاکہ عوام پینے کا صاف پانی میسر آسکے۔

حملہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -