انجینئر یونیورسٹی کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کے منصوبہ کا سنگ بنیاد رکھ دیا گیا

انجینئر یونیورسٹی کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کے منصوبہ کا سنگ بنیاد رکھ ...

  

 لاہور (سٹی رپورٹر) یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور کو شمسی توانائی پر منتقل کرنے کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا گیا ہے۔ وزیر توانائی پنجاب ڈاکٹر محمد اختر ملک اور وائس چانسلر یو ای ٹی لاہورپروفیسرڈاکٹر سیدمنصور سرور نے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھا۔تفصیلات کے مطابق اس منصوبے کی پیدواری صلاحیت ایک میگا واٹ ہے جبکہ منصوبے کی تکمیل کے بعد یونیورسٹی کو سالانہ 17کروڑ روپے کا فائدہ ہوگا۔ سنگ بنیاد کی تقریب کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر توانائی پنجاب نے صوبے میں قابل تجدید توانائی کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔

 ان کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ کلین اور گرین انرجی کی طرف پہلا قدم ہے۔ہم سولرائزیشن کے اس عمل کا دائرہ کار پنجاب کی باقی تمام جامعات تک بھی بڑھائیں گے۔ وزیر توانائی کے مطابق ابھی تک پنجاب کی گیارہ جامعات کو سولر پر منتقل کرنے کے معاہدوں پر دستخط کئے جاچکے ہیں، جبکہ ان منصوبوں پر حکومت پنجاب کا ایک روپیہ بھی خرچ نہیں ہوا۔ان کا کہنا تھا کہ انہیں اس منصوبے کے لئے وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی مکمل سپورٹ حاصل رہی ہے۔وہ وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق سستی اور ماحول دوست توانائی کی فراہمی کے لئے دن رات کام کر رہے ہیں۔اس موقع پر وائس چانسلر ڈاکٹر منصور سرور نے وزیر توانائی کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ کلین اینڈ گرین انرجی اس وقت دنیا کی ضرورت بن چکی ہے۔ یو ای ٹی اس منصوبے سے جہاں سالانہ کروڑوں روپے کی بچت کرے گی، وہی رقم یونیورسٹی میں تحقیقی کاموں کیلئے خرچ ہوگی۔ انہوں نے ملک میں کلین اینڈ گرین انرجی کے فروغ کی ضرورت پر زور دیا۔ یہ منصوبہ 9تا10ہفتوں کی قلیل مدت میں مکمل کر لیا جائے گا۔#/s#

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -