کورونا سے نمٹنے کے حکومتی اقدامات،عدالت نے تحقیقات کااعلان کردیا

کورونا سے نمٹنے کے حکومتی اقدامات،عدالت نے تحقیقات کااعلان کردیا
کورونا سے نمٹنے کے حکومتی اقدامات،عدالت نے تحقیقات کااعلان کردیا

  

پیرس(ڈیلی پاکستان آن لائن)فرانس میں وزیراعظم ایڈوارڈ پلیپ کے استعفیٰ دینے کے چند گھنٹے بعد ہی عدالت نے ان کے خلاف انکوائری کھول دی۔ 

برطانوی نشریاتی ھکومت کے مطابق فرانس میں حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کی وبا کے حکومتی اقدامات کی عدالتی تفتیش کا اعلان کیا گیا ہے۔

اس تفتیش کا مرکز تین اعلیٰ ترین اہلکار ہیں جن میں حال ہی میں اپنے عہدے سے مستعفی ہونے والے وزیراعظم ایڈوارڈ پلیپ بھی شامل ہیں۔

یاد رہے کہ ایڈوارڈ پلیپ نے جمعے کے روز اپنی کابینہ میں ردوبدل کے دوران اپنا عہدہ چھوڑ دیا تھا۔

ایڈوارڈ پلیپ کے استعفیٰ دینے کے چند گھنٹے بعد ہی وزارتی بدعملی کی جانچ کرنے والی عدالت لا کورٹ آف دی ریپبلک ایک انکوائری کرے گی جس میں ان کی حکومت کے کووڈ19 ریسپانس کی تفتیش کی جائے گی۔

سابق وزیراعظم کے علاوہ ان تحقیقات میں دو سابق وزرائے صحت کی بھی تفتیش کی جانی ہے۔

اس سے قبل کچھ ایسی خبریں سامنے آئی تھیں کہ  فرانس کے صدر کی خواہش پر ان کے وزیراعظم ایڈورڈ فلپ اور ان کی کابینہ نےاپنے عہدےچھوڑدیئے۔ صدرعمانویل میکخواں نےوزیراعظم اور کابینہ ارکان کے استعفیٰ منظور بھی کرلیے۔

برطانوی خبررساں ادارے کے مطابق فرانس میں سیاست میں ہلچل مچی ہے جہاں وزیراعظم ایڈورڈفلپ اپنےعہدےسےمستعفی ہوگئے۔ان کے ساتھ ہی ان کی کابینہ نے بھی اپنے استعفے صدر کو جمع کرادئیے۔ ایلیزے پیلس سے جاری بیان میں استعفوں کی وجہ نہیں بتائی گئی،تاہم کہا جارہا ہے کہ صدرعمانویل میکخواں حالیہ میونسپل انتخابات میں اپنی پارٹی کوہونے والی شکست کی وجہ سےکابینہ میں ردوبدل چاہتے تھے۔  ایڈوارڈفلپ نےپندرہ مئی2017کو وزارت عظمیٰ کا عہدہ سنبھالا تھا۔ فرانس میں وزیراعظم کا انتخاب صدر کرتا ہے۔ جو بعد میں اپنی کابینہ تشکیل دیتا ہے۔

فرانس کی حکومت کو کورونا وائرس کی وبا کے دوران طبی آلات کی عدم دستیابی کے حوالے سے شدید تنقید کا سامنا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -