اس شرمناک ترین کام کا سلسلہ بحال کیا جائے، درجنوں جسم فروش گھروں سے نکل آئے

اس شرمناک ترین کام کا سلسلہ بحال کیا جائے، درجنوں جسم فروش گھروں سے نکل آئے
اس شرمناک ترین کام کا سلسلہ بحال کیا جائے، درجنوں جسم فروش گھروں سے نکل آئے

  

برلن(ڈیلی پاکستان آن لائن)جرمنی ے دارالحکومت برلن  میں درجنوں سیکس ورکز نے ایک مظاہرہ کیا جس میں مطالبہ کیا گیا کہ قحبہ خانوں کو بھی دوبارہ کھلنے کی اجازت دی جائے۔

ماسک پہنے اور ہاتھوں میں جنسی گڑیاں   اٹھائے ہوئے گروہ میں شامل اراکین نے جرمنی کی وفاقی کونسل ’بنڈیزریٹ‘ کے سامنے مظاہرہ کیا۔ انھوں نے ہاتھوں میں پلے کارڈ بھی اٹھائے ہوئے تھے۔

ایک پلے کارڈ پر لکھا تھا  کہ اگر پابندیاں جاری رہیں تو یہ صنعت غیر قانونی طور پر کام کرنے کے لیے مجبور ہو جائے گی۔

اگرچہ جرمنی کے زیادہ تر لاک ڈاؤن اقدامات کو اٹھا لیا گیا ہے، لیکن جسم فروشی پر، جسے 2002 میں جائز قرار دیا گیا تھا، وائرس میں پھیلاؤ کے ڈر سے مارچ سے پابندی لگی ہوئی ہے۔

لیکن متعدد ہمسایہ ممالک نے جن میں سوئٹزرلینڈ، آسٹریا اور نیدرلینڈز شامل ہیں، پہلے ہی قحبہ خانوں کو کام کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -