قومی و عالمی اداروں کا آپریشن، بچوں کی فحش فلمیں بنانے والے پاکستانی گرفتار، کن شہروں سے تعلق تھا؟افسوسناک خبر

قومی و عالمی اداروں کا آپریشن، بچوں کی فحش فلمیں بنانے والے پاکستانی ...
قومی و عالمی اداروں کا آپریشن، بچوں کی فحش فلمیں بنانے والے پاکستانی گرفتار، کن شہروں سے تعلق تھا؟افسوسناک خبر

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) دنیا بھر میں بچوں کے جنسی استحصال اور ان کی نامناسب ویڈیوز بنا کر چند ٹکوں کی خاطر آن لائن فروخت کرنے کا قبیح کاروبار کیاجاتا ہے۔

بدقسمتی سے ایسی ویب سائٹس کے لیے کام کرنےو الے پاکستان میں بھی موجود ہیں۔ ڈان نیوز کے مطابق ایسے ہی کچھ عناصر کی نشاندہی کے بعد پہلی بار قومی و عالمی اداروں نے ایک مشترکہ آپریشن کرکے پاکستان کے تین شہروں سے تین ملزموں کو گرفتار کرلیا ہے جس بچو ں کی فحش فلموں کی ویب سائٹس سے منسلک تھے۔

بین الاقوامی اداروں کی معاونت سے پکڑے گئے ان ملزموں کو ایف آئی اے کےسائبر ونگ نے زیر حراست ملزمان کو برقی جرائیم کی روک تھام (سائبر جرائم) عدالتوں میں پیش کر کے 3 روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کرلیا۔

ایف آئی اے کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا کہ انٹر پول، یورپی اور بین الاقوامی قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بھرپور مدد سے پہلی مرتبہ ایسے ملزمان کو گرفتار کیا گیا جو پورونوگرافک ویب سائٹ کے اراکین تھے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں ایف آئی اے عام افراد کی شکایت پر مشتبہ ملزمان کو گرفتار کرتی تھی اور اس کے بعد ان سے مزید تفتیش کی جاتی تھی۔

تاہم اس مرتبہ ایف آئی نے خوف تفتیش کا آغاز کیا اور مشتبہ چائلڈ پورنو گرافرز کا سراغ لگانے کے لیے بین الاقوامی قانون نافذ کرنے والے اداروں سے رابطہ کیا۔

عہدیدار کا کہنا تھا کہ ایف آئی اے کے بین الاقوامی شراکت داروں سے ملزمان سے حاصل ہونے والے ڈیٹا کا جائزہ لینے کے بعد مجرمان کا سراغ لگانے میں ادارے کی مدد کی۔

ایف آئی اے کے مطابق تین ملزمان کو پنجاب میں لاہور، فیصل آباد اور گوجرانوالہ سے گرفتار کیا گیا اور ان کے قبضے سے فحش مواد، تصاویر اور دیگر آلات بھی برآمد ہوئے۔

ملزمان پر انسداد برقی جرائم ایکٹ اور پاکستان پینل کوڈ کی متعدد دفعات عائد کی گئی ہیں۔

مزید :

قومی -جرم و انصاف -