وزیراعظم کی بھارت سے تنازع کے امکان پر اعلیٰ فوجی قیادت سے مشاورت، عمران خان کا بیان بھی سامنے آگیا

وزیراعظم کی بھارت سے تنازع کے امکان پر اعلیٰ فوجی قیادت سے مشاورت، عمران ...
وزیراعظم کی بھارت سے تنازع کے امکان پر اعلیٰ فوجی قیادت سے مشاورت، عمران خان کا بیان بھی سامنے آگیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)  اندرونی اور داخلی سیکیورٹی سلامتی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے اعلیٰ سطح کا ایک اجلاس ہوا ہے جس کی سربراہی وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے کی۔

وزیراعظم آفس کے مطابق وزیراعظم نے اندرونی اور داخلی سیکیورٹی سلامتی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے اعلیٰ سطح کے اجلاس کی سربراہی کی۔

ڈان نیوز کے مطابق اجلاس میں  وزیر دفاع پرویز خٹک، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل ندیم رضا، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ، چیف آف نیول اسٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی، چیف آف ایئر اسٹاف ایئر مارشل مجاہد انور خان، ڈائریکٹر جنرل انٹر سروسز انٹیلی جنس لیفٹننٹ جنرل فیض حامد اور ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز نعمان ذکریا شریک تھے۔

 دوران اجلاس وزیراعظم نے پاکستان کی سلامتی کے ایجنڈا پر بھارت کے تنازع کے امکان سے متعلق اعلیٰ فوجی قیادت اور انٹیلی جنس معاونین سے مشاورت کی۔

اس موقع پر عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان اپنے ہمسایہ ممالک کے ساتھ پرامن باہمی تعاون پر یقین رکھتا ہے۔

اجلاس کے بعد جاری بیان میں بھارت پر مرکوز زبان سے لائن آف کنٹرول(ایل او سی) پر بگڑتی صورتحال کے بطور مرکزی ایجنڈا نکتے کے طور پر نشاندہی کرتی ہے۔

بیان میں کیا گیا کہ اجلاس میں عزم کیا گیا کہ ہر قیمت پر پاکستان کی خودمختاری کا تحفظ کیا جائے گا۔اس میں یہ عزم بھی کیا گیا کہ پاکستان اپنے ہمسایہ ممالک کے ساتھ پرامن باہمی تعاون کی بقا پر یقین رکھتا ہے لیکن ہمارے پاس اپنے لوگوں اور علاقائی سالمیت کے دفاع کی خواہش اور صلاحیت دونوں موجود ہیں۔

   بیان میں کہا گیا کہ اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر سنگین خدشات کا اظہار کیا گیا اور بین الاقوامی برادری کو نوٹس لینے پر زور دیا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -