بھارت میں ایک دن میں کورونا کے ریکارڈ کیسز،ماہرین نے نیا خدشہ ظاہر کردیا

بھارت میں ایک دن میں کورونا کے ریکارڈ کیسز،ماہرین نے نیا خدشہ ظاہر کردیا
بھارت میں ایک دن میں کورونا کے ریکارڈ کیسز،ماہرین نے نیا خدشہ ظاہر کردیا

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت میں کورونا وائرس پر قابو نہ پایا جاسکا۔ حکام کے مطابق بھارت میں4 جولائی کو ریکارڈ 22ہزار کیسز سامنے آئے ہیں جب کہ 442 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

برطانوی خبررساں ادارے نے بھارتی حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ بارش میں مون سون کے دوران کیسز میں اضافہ اس وبا کے مزید پھیلاو کا خدشہ ظاہر کیا جارہاہے۔

رپورٹ کے مطابق سب سے زیادہ کیسز بھارت کی مغربی ریاست مہاراشڑا خصوصا اس کے دارالحکومت ممبئی میں سامنے آئے ہیں۔ مہاراشٹرا میں سامنے آنے والے کیسز کی تعداد 6,364 بتائی جاتی ہے جب کہ وہاں ہلاک ایک دن میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 198رہی۔

بھارت دنیا بھرمیں کورونا سےسب سے زیادہ متاثرہ مریضوں والے ممالک کی فہرست میں چوتھے نمبر پر ہے جہاں کووڈ 19کے مریضوں کی مجموعی تعداد 6لاکھ 40ہزار ہوگئی ہے۔

پہلے نمبر پر امریکہ، پھر برازیل اور اس کے بعد روس میں سب سے زیادہ کیسز موجود ہیں۔

عالمی سطح پر کورونا وائرس کے کیسز پر نظر رکھنے والی جان ہاپکنز یونیورسٹی کی ویب سائٹ کے اعداد و شمار کے مطابق بھارت میں کووِڈ 19 کے 18 ہزار 655 مریض ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ صحتیاب افراد کی تعداد 60 فیصد کے قریب یعنی 3 لاکھ 94 ہزار 227 ہے۔

رائٹرز کے مطابق ممبئی میں حکام نے لوگوں کوتنبیہ کی ہے کہ وہ ساحل علاقوں سے دور رہیں کیونکہ  آئندہ 48 گھنٹوں میں شدید بارشوں کا امکان ہے۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ مون سون برسات سے شہر کے مئی حصوں میں پانی کھڑا ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے کورونا وائرس کی روک تھام کی کوششیں متاثر اور اس کے نتیجے میں انفیکشن کا شکار ہونے والے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -