درجنوں حاملہ خواتین کو اپنی ہوس کا نشانہ بنانے والے ڈاکٹر کو سزا

درجنوں حاملہ خواتین کو اپنی ہوس کا نشانہ بنانے والے ڈاکٹر کو سزا
درجنوں حاملہ خواتین کو اپنی ہوس کا نشانہ بنانے والے ڈاکٹر کو سزا

  

وارسا(مانیٹرنگ ڈیسک) یورپی ملک پولینڈ میں دو درجن سے زائد مریض خواتین کو اپنی ہوس کا نشانہ بنانے والے ڈاکٹر کو قید کی سزا سنا دی گئی۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس ڈاکٹر کا نام مونزر ایم بتایا گیا ہے جس نے مجموعی طور پر 26خواتین مریضوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا، جن میں کئی کم عمر لڑکیاں بھی شامل تھیں۔ اس کی درندگی کا شکار ہونے والی سب سے کم عمر لڑکی 14سال کی تھی۔

رپورٹ کے مطابق اس ڈاکٹر کو اگست 2018ءمیں گرفتار کیا گیا تھا جب کئی مریض خواتین نے اس کے خلاف پولیس کو درخواست دی اور اپنے ساتھ ہونے والے غیرانسانی سلوک کے متعلق بتایا۔ پولیس نے اسے گرفتار کرکے زیبرزے کورٹ میں پیش کیا جہاں سے اب اسے 15سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔ ابتدائی طور پر 4خواتین کی طرف سے پولیس سے رجوع کیے جانے کے بعد پولیس نے اس ڈاکٹر کے زیرعلاج رہنے والی دیگر سینکڑوں خواتین سے رابطہ کیا اور ان میں سے بھی 22مزید خواتین نے اس کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا شکار ہونے کا انکشاف کر ڈالا۔

مزید :

بین الاقوامی -