تعلیم کا بہت حرج ہوا، سکول جیسی پڑھائی آن لائن نہیں ہو سکتی، شفقت محمود 

تعلیم کا بہت حرج ہوا، سکول جیسی پڑھائی آن لائن نہیں ہو سکتی، شفقت محمود 

  

  

لاہور(فلم رپورٹر)سابق ٹیسٹ کرکٹر عاقب جاوید کی اہلیہ فرزانہ عاقب کی شاعری کی 5 کتب ”محبت کی بھلا کب عمر ہوتی ہے، تمہارے ساتھ پھر جی لیں، کرامل سن سیٹ، بلیو منڈے آف لو، آئی ڈانٹ رائٹ لائف رائٹ اٹسیلف“ کی افتتاحی تقریب گزشتہ روز الحمرا آرٹ گیلری میں منعقد ہوئی اس تقریب کے مہمان خصوصی وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود تھے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے شفقت محمود کا کہنا تھا کہ فرزانہ عاقب کی زندگی میں بہت ساری اچیومنٹس ہیں فرزانہ کی تعریف کیلئے الفاظ کم پڑ جاتے ہیں یہ زندگی گزارنے کا طریقہ بتا رہی ہیں میں عاقب جاوید کو بچپن سے جانتا ہوں ان سے ہماری جوانی کی یادیں وابستہ ہیں اب عاقب فرزانہ کے نام سے پہچانے جائیں گے ایک کتاب لکھنا مشکل ہوتی ہے فرزانہ نے پانچ کتابیں لکھ ڈالی ہیں وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا مزید کہنا تھا کرونا جیسی بیماری کی وجہ سے تعلیم کا بہت حرج ہواجو پڑھائی سکول میں ہو سکتی ہے وہ آن لائن نہیں ہو سکتی بچوں کی صحت کو نقصان پہنچائے بغیر تعلیم کے نقصان کو پورا کرنا ہے پچھلے سال امتحانات منسوخ ہوئے اس سال امتحانات لینے کا فیصلہ کیا ہے اس سال امتحان نا ملتوی ہوں گے اور نا ہی کینسل ہوں گے یہ سب صوبوں کا متفقہ فیصلہ ہے سب طلباء کو نصیحت کروں گاکہ اپنی پڑھائی جاری رکھیں ادھر ادھر کی باتوں پر توجہ نا دیں جو ڈیٹ شیٹ جاری ہوئی ہیں ان کے مطابق ہی امتحانات ہوں گے صوبوں کو مکمل اختیار ہے کہ چھٹیاں کریں یا نا کریں اس دفعہ غیر معمولی حالات ہیں اب سکولوں کو کھلنا چائیے ہماری جماعت آزادی صحافت پر یقین رکھتی ہے۔ جسٹس (ر)ناصرہ جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ فرزانہ انسانی حقوق خصوصا حقوق نسواں کی چیمپئن ہیں یہ پاکستان کے لئے نایاب تحفہ ہیں ان کا کام قابل تعریف ہے۔فرزانہ کا کہنا تھا کہ فرزانہ عاقب یہ میرے پانچ بچے ہیں جن میں تین انگریز اور دو اردو ہیں بیس بائیس برس سے ادب سے منسلک ہوں کینیڈا سے تعلیم حاصل کی لوگوں نے حضرت رومی کے ساتھ میری شاعری کو ملایا اردو میں ہمارے پاس بہت سے جوہر نایاب ہیں میں پاکستان کو انگریزی شاعری کو فروغ دوں۔ سابق کرکٹر عاقب جاوید سے شادی کو 23 سال ہوگئے ہیں۔ پانچ کتابیں موبائل فون پر لکھیں جب شادی ہوئی تب مجھے کتابوں کا شوق نہیں تھا۔عاقب جاوید کا کہنا تھا کہ بیٹی ہوتو اللہ کا شکر ادا کرنا چاہیے اپنی اکلوتی بیٹی کو مس کر رہا ہوں۔

شفقت محمود 

مزید :

صفحہ آخر -