تعمیراتی سرگرمیاں تیز،سیمنٹ کی کھپت میں نمایاں اضافہ

تعمیراتی سرگرمیاں تیز،سیمنٹ کی کھپت میں نمایاں اضافہ

  

کراچی(اکنامک رپورٹر)نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کے تحت تعمیراتی سرگرمیوں میں تیزی اور پبلک سیکٹر ڈیولپمنٹ پروگرام کے تحت حکومت کے موثر اقدامات کی وجہ سے سیمنٹ کی کھپت میں نمایاں اضافہ دیکھا جارہا ہے۔ جون 2020کے مقابلے میں جون 2021 میں سیمنٹ سیکٹر کی شرح نمو 12.73فیصد رہی، جون 2021میں سیمنٹ کی مجموعی فروخت 5.211ملین ٹن رہی جبکہ جون 2020میں سیمنٹ کی کھپت 4.623ملین ٹن ریکارڈ کی گئی تھی۔آل پاکستان سیمنٹ مینوفیکچررز ایسوسی ایشن کے مطابق جون 2021کے دوران سیمنٹ کی مقامی فروخت 4.668ملین ٹن رہی جو گزشتہ سال جون میں فروخت ہونے والی 3.834ملین ٹن فروخت سے 21.74فیصد زائد رہی،جون 2021 میں سیمنٹ کی ایکسپورٹ 31فیصد کمی سے 5 لاکھ 42ہزار 622 ٹن رہی جبکہ جون 2020میں ایکسپورٹ 7لاکھ87ہزار 842ٹن رہی تھی،مالی سال 2020-21میں سیمنٹ کی مجموعی طلب میں غیرمعمولی اضافہ دیکھا گیا،مجموعی فروخت 20.12فیصد اضافے سے 57.433ملین ٹن رہی جبکہ مالی سال 2019-20میں مجموعی فروخت 47.812ملین ٹن ریکارڈ کی گئی تھی، مالی سال 2020-21میں سیمنٹ کی مقامی فروخت 20فیصد اضافے سے 48.119ملین ٹن رہی، سیمنٹ کی ایکسپورٹ18.69فیصد اضافے سے 9.314ملین ٹن رہی۔ آل پاکستان سیمنٹ مینوفیکچررز ایسوسی ایشن کے ترجمان نے مالی سال 2020-21کو سیمنٹ سیکٹر کے لیے ایک بہترین سال قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سال سیمنٹ کی طلب میں قابل قدر اضافہ ہوا۔ پبلک سیکٹر ڈیولپمنٹ پروگرام کے تحت تعمیراتی سرگرمیوں میں اضافہ، سی پیک کے پراجیکٹس اور ہاسنگ منصوبوں کے ساتھ صنعتی طلب کو مدنظر رکھتے ہوئے سیمنٹ کی شرح نمو آئندہ 3 سال میں 15فیصد رہنے کی توقع ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -