کورونا،مزید34اموات،1400نئے کیسز رپورٹ

کورونا،مزید34اموات،1400نئے کیسز رپورٹ

  

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) ملک میں کورونا وائرس سے مزید 34افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ 1400نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔ ہفتے کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری تازہ بیان کے مطابق گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا کی تشخیص کیلئے 48ہزار 27ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے ایک ہزار 400افراد میں کورونا وائر س کی تصدیق ہوئی۔ملک میں اب تک کورونا کے مصدقہ مثبت کیسز کی تعداد9لاکھ 61ہزار 85ہوگئی ہے جن میں سے 90،6387مریض شفایاب ہوچکے ہیں۔گزشتہ روز اس وبا نے مزید 34افراد کی زندگیوں کو نگل لیا، اس طرح ملک میں اب تک اس وباء سے جاں بحق افراد کی مجموعی تعداد 22 ہزار 379 ہوگئی ہے۔جبکہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے کہا ہے ملک بھر میں کورونا مریضوں کیلئے مختص 212 وینٹی لیٹرز زیر استعمال ہیں۔این سی او سی نے کورونا سے متعلق اعداد و شمار بتاتے ہوئے کہا ملتان اور اسلام آباد میں کورونا کیلئے مختص وینٹی لیٹرز میں سے 19 فیصد زیر استعمال ہیں۔لاہور17، بہاولپور میں کوروناکیلئے وینٹی لیٹرز میں سے 16 فیصد زیر استعمال ہیں جبکہ گلگت میں 73فیصد آکسیجن بیڈز پر کورونا مریض زیر علاج ہیں۔ کراچی میں 26 فیصد آکسیجن بیڈ، مظفر آباد، راولپنڈی میں 19فیصد آکسیجن بیڈ زیر استعمال ہیں،جبکہ ملک بھر کے 639 ہسپتالوں میں کورونا کے 2ہزار 111 مریض داخل ہیں۔این سی اوسی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران انتقال کرنیوالے34میں سے 17 مریض وینٹی لیٹرز پر تھے۔ادھر  وفاقی وزیرمنصوبہ بندی، ترقی واصلاحات اسد عمرنے کہا ہے امریکی حکومت کی جانب سے ارسال کردہ موڈرنا ویکسین کی 25لاکھ خوراکیں مل گئیں۔ ہفتہ کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا امریکی حکومت کی جانب سے ارسال کردہ موڈرنا ویکسین کی 25 لاکھ خوراکیں مل گئی ہیں، یہ ویکسین خاص طور ان افراد کیلئے ہیں جوبیرون سفرکرتے ہیں یازیرتعلیم ہیں۔وفا قی وزیر نے کہا امریکا کی کوویڈ سے متعلق یہ ترقی پسندانہ پالیسی قابل تعریف ہے۔دوسری طرف طبی ماہرین نے کہا ہے کہ عوام کورونا وائرس کیخلاف یہ احتیاطی تدابیراختیارکریں تو اس وباء کیخلاف جنگ جیتنا آسان ہوسکتا ہے۔ صبح کا کچھ وقت دھوپ میں گزارنا چاہیے، کمروں کو بند کرکے نہ بیٹھیں بلکہ دروازے کھڑکیاں کھول دیں اور ہلکی دھوپ کو کمروں میں آنے دیں۔ بند کمروں میں اے سی چلا کربیٹھنے کے بجائے پنکھے کی ہوا میں بیٹھیں۔سورج کی شعاعوں میں موجود یو وی شعاعیں وائرس کی بیرونی ساخت پر ابھرے ہوئے ہوئے پروٹین کو متاثر کرتی ہیں اور وائرس کو کمزور کردیتی ہیں۔ درجہ حرارت یا گرمی کے زیادہ ہونے سے وائرس پرکوئی اثرنہیں ہوتا لیکن یو وی شعاعوں کے زیادہ پڑنے سے وائرس کمزور ہوجاتا ہے۔پانی گرم کرکے تھرماس میں رکھ لیں اورہرایک گھنٹے بعد آدھا کپ نیم گرم پانی نوش کریں۔ وائرس سب سے پہلے گلے میں انفیکشن کرتا ہے اوروہاں سے پھیپھڑوں تک پہنچ جاتا ہے، گرم پانی کے استعمال سے وائرس گلے سے معدے میں چلا جاتا ہے، جہاں وائرس ناکارہ ہوجاتا ہے۔

کورونا اموات

مزید :

صفحہ اول -