چا و ل کے کا شت کا ر بہتر پیداوا ر کیلئے جد ید طر یقے ا پنا ئیں: زر عی ما ہر ین

چا و ل کے کا شت کا ر بہتر پیداوا ر کیلئے جد ید طر یقے ا پنا ئیں: زر عی ما ہر ین

سرگو د ہا (اے پی پی) ز ر عی ماہر ین نے چا و ل کے کا شت کا رو ں کو مشو ر ہ د یا ہے کہ چا و ل کے کا شت کا ر بہتر پیداوا ر کیلئے جدید طر یقے ا پنا ئیں کیو نکہ چا و ل گندم کے بعد د نیا میں سب سے بڑا ذریعہ خوراک ہے ۔پو ر ی د نیا میں چا و ل کی کل پیداوا ر 550ملین ٹن سے زا ئد ہے جبکہ د نیا کی کل پیداوا ر کا 92فیصد حصہ بر اعظم ا یشیا ءمیں پیدا ہو تا ہے پا کستان میں چا ول، گند م اورکپاس کے بعد تیسر ی بڑ ی فصل ہے او ر2.8ملین ہیکٹر سے زا ئد ر قبے پر کا شت ہو تی ہے جو کہ کل ز یر کاشت ر قبہ کا 11فیصد ہے۔ چا و ل کا پا کستان کے جی ڈ ی پی میں حصہ 1.1فیصد کے قریب ہے پا کستان چا و ل پیدا کر نے وا لا 12وا ں بڑ ا ملک ہے ۔پا کستان د نیا کا 1.3فیصد چا و ل پیدا کر تا ہے جبکہ چا و ل کی برآمدات کی عا لمی منڈی میں پا کستان تیسر ے نمبر پر ہے ۔پا کستان میں چاو ل کا کل استعما ل تقر یبا 2.5ملین ٹین سا لا نہ ہے جبکہ کل پیداوار تقر یبا 7ملین ٹن ہے اسی طرح لگ بھگ 4.4ملین ٹن چا و ل ہما ر ے وافر مقدار میں مو جو د ہو تا ہے اسے ایکسپورٹ کر کے زر مبا د لہ کما یا جا سکتا ہے۔

 جبکہ د نیا بھر میں چاو ل کی ایکسپو ر ٹ ما ر کیٹ میں پا کستان چا و ل کی ڈیما نڈ بہت ز یا د ہ ہے۔

مزید : کامرس