پاک چین اقتصادی راہداری کیلئے 73 ارب روپے ، کراچی لاہور موٹروے کیلئے 125 ارب روپے مختص

پاک چین اقتصادی راہداری کیلئے 73 ارب روپے ، کراچی لاہور موٹروے کیلئے 125 ارب ...
پاک چین اقتصادی راہداری کیلئے 73 ارب روپے ، کراچی لاہور موٹروے کیلئے 125 ارب روپے مختص

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) نئے مالی سال کے ترقیاتی پروگرام میں پاک اقتصادی راہداری کیلئے 73 ارب روپے جبکہ کراچی لاہور موٹروے کیلئے 125 ارب روپ مختص کئے گئے ہیں۔ ملتان، سکھر موٹروے کیلئے ساڑھے 5 ارب روپے رکھے گئے ہیں، آئندہ مالی سال کے دوران پاک چین اقتصادی راہداری کیلئے 49 ارب سے سڑکیں اور موٹر ویز تعمیر کی جائیں گی، 859 کلو میٹر طویل کراچی، لاہور موٹروے کیلئے زمین حاصل کرنے کی خاطر رواں مالی سال میں پچیس ارب اور آئندہ مالی سال میں تیس ارب روپے رکھے گئے ہیں جس کے ذریعے منصوبے کیلئے مطلوب تمام زمین خریدی جاسکے گی، 276 کلو میٹر لاہور سے خانیوال سیکشن، 387 کلومیٹر ملتان سے سکھر سیکشن، 296 کلومیٹر سکھر سے حیدرآباد سیکشن اور 136 کلومیٹر حیدر آباد سے کراچی سیکشن کی تعمیر کا کام عنقریب شروع ہوجائے گا اور اس پر پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے ذریعے عملدرآمد کیا جائے گا۔ 387کلومیٹر طویل ملتان، سکھر موٹروے کیلئے 5 ارب 50 کروڑ روپے رکھے گئے ہیں، اس منصوبے کیلئے 10 فیصد رقم وفاق دے گا جبکہ 90 فیصد پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ ہوگی، سکھر سے حیدر آباد سیکشن کیلئے 3 ارب مختص کئے گئے ہیں۔ علاوہ وزیں وزارت مواصلات کے ذیلی ادارہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے 49 جاری 18 نئے منصوبوں سمیت وزارت کی 4سکیموں اور پاک چین اقتصادی راہداری کے 5 منصوبوں کیلئے مجموعی طور پر ایک کھرب 11 ارب 75 کروڑ 40 لاکھ 73 ہزار روپے مختص کئے گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق حکومت نے مالی سال 2014-15ءکے بجٹ میں ترقیاتی پروگرام میں شاہرات کی تعمیر کیلئے 49 جاری منصوبوں کے لئے 54 ارب 54 کروڑ 29 لاکھ 43 ہزار روپے رکھے گئے ہیں جبکہ 18 نئے منصوبوں کیلئے 8 ارب 2 کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں جبکہ وزارت کے زیر اہتمام 4 سکیموں پر 19 کروٹ روپے خرچ کئے جائیں گے اور پاک چین اقتصادی راہ داری کے 5 منصوبوں کیلئے 49 ارب روپے جاری کئے جائیں گے۔ وزیراعظم میاں نواز شریف کے عزم کے تحت لاہور کراچی موٹروے کیلئے 30 ارب روپے جاری کئے جائیں گے۔ ترقیاتی پروگرام میں اس کے علاوہ بھی بہت سی شاہراہوں کے منصوبے شامل ہیں۔ ان میں M-4 کے فیصل آباد سے خانیوال تک 184 کلومیٹر سیکشن اور 57 کلومیٹر خانیوال سے ملتان سیکشن شامل ہیں۔ لواری ٹنل ی تیزی سے تکمیل، وادی لیپہ ٹنل، سلطان باہو کے نزدیک دریائے چناب پر پل، پاکپتن کے نزدیک بابا فرید پل، ننکانہ صاحب کے نزدیک دریائے راوی پر سید والا پل اور دریائے سندھ پر N-5 اور N-55 کو ملانے کیلئے ایک پل شامل ہے۔

مزید : بجٹ