لیہ پولیس کا بااثر افراد کو خوش کرنے کیلئے مقامی کاشتکار پر وحشیانہ تشدد ، وزیر اعلی پنجاب نے نوٹس لے لیا

لیہ پولیس کا بااثر افراد کو خوش کرنے کیلئے مقامی کاشتکار پر وحشیانہ تشدد ، ...
لیہ پولیس کا بااثر افراد کو خوش کرنے کیلئے مقامی کاشتکار پر وحشیانہ تشدد ، وزیر اعلی پنجاب نے نوٹس لے لیا

  


لیہ(مانیٹرنگ ڈیسک )بااثر افراد کی پشت پناہی پر پولیس وحشی ہوگئی اور خوش کرنے کے لیے تھانہ چوبارہ کے سامنےکاشتکار کو سڑک پر لٹاکر سرعام چھترول کی جبکہ سارے واقعے کی فوٹیج سامنے آنے کے بعد بھی ڈی پی او لیہ صفائیاں پیش کرتے رہے،وزیر اعلی پنجاب نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او سے رپورٹ طلب کر لی ۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ چوبارہ کے ایس ایچ او نے اے ایس آئی کے ساتھ مل کر با اثر شخص کی نوکری چھوڑنے کی پاداش میں مقامی کاشت کار کو اپنے تھانے کے سامنے ہی الٹا لٹا کر اس پر ڈنڈوں کی برسات کردی ، غریب کاشتکار نے پولیس کو جاں بخشی کی دہا ئیاں دیتا رہا اور ایس ایچ او کی ٹانگوں سے بھی لپٹ گیا لیکن پولیس نے اس کی ایک نہ سنی ۔ میڈیا نے پولیس کا موقف جاننے کے لیے جب ڈی پی او لیہ غازی صلاح الدین سے رابطہ کیا تو ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے ابھی تک واقعے کے وڈیو نہیں دیکھی ہے ، فوٹیج دیکھ کر ان اہل کاروں کے خلاف قانونی کا رروائی کا فیصلہ کروں گا ۔ان کا مزید کہنا تھاکہ اگر متاثرہ شخص میرے پاس دادر سی کے لیے آیا تو انکوائری کی جائے گی ۔ جب ان سے سوال کیا گیا کہ اگر فو ٹیج درست نکلی کو کیا کارروائی کی جائے گی تو ان کا کہنا تھا کہ واقعہ صحیح ثابت ہونے پر اس گھناﺅنی کارروائی میں ملوث پولیس اہلکاروں کے خلاف محکمانہ کارروائی کی جائے گی۔دوسری جانب وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف نے واقعے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی اولیہ سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔

مزید : لیّہ /اہم خبریں