ایران نے پیسے لینے کیلئے وزیراعظم نواز شریف کے طیارے میں تیل بھرنے سے انکار کر دیا

ایران نے پیسے لینے کیلئے وزیراعظم نواز شریف کے طیارے میں تیل بھرنے سے انکار ...
ایران نے پیسے لینے کیلئے وزیراعظم نواز شریف کے طیارے میں تیل بھرنے سے انکار کر دیا

  


تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) بین الاقوامی خبر رساں ایجنسی نے دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ ماہ وزیراعظم نواز شریف کے دورہ ایران کے دوران ایرانی حکام نے پی آئی اے سے محض   5,600 ڈالر کی وصولی کے لئے پاکستانی وزیراعظم کے طیارے میں تیل بھرنے سے انکار کر دیا۔ پی آئی اے کے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ ایرانی حکام نے واجبات کی ادائیگی تک جہاز ریلیز کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ تفصیلات کے مطابق 18 جنوری کو پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 788 نے لندن سے کراچی آتے ہوئے ایک مسافر کو دل کا دورہ پڑنے کے باعث تہران ائیرپورٹ پر ہنگامی لینڈنگ کی۔ ایرانی حکام سے ایمبولینس اور ڈاکٹر کا بندوبست کرنے کی درخواست کی گئی جس کا کل بل لینڈنگ اور پارکنگ سمیت تقریباً 5,600 ڈالر بنا۔ کئی ماہ گزرنے کے باوجود پی آئی اے کی جانب سے بل کی ادائیگی نہ کی گئی تو ایران ائیر کے حکام نے جھنجھلاہٹ نکالنے کا یہ منفرد طریقہ نکالا۔ اس پر پی آئی اے حکام کی دوڑیں لگ گئیں اور مقامی آفس کے ذریعے فوری بل جمع کرا دیا کہ کہیں وزیراعظم یا دفتر خارجہ کو صورتحال کا پتہ نہ لگ جائے۔ پی آئی اے ترجمان نے اس خبر کی تصدیق کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ رقم کی ادائیگی پہلے ہی کر دی گئی تھی.

مزید : ڈیلی بائیٹس