سائنسدانوں نے جوان چوہوں کا خون بوڑھے چوہوں کو لگایا تو کیا نتیجہ نکلا؟ انتہائی حیران کن تجربہ

سائنسدانوں نے جوان چوہوں کا خون بوڑھے چوہوں کو لگایا تو کیا نتیجہ نکلا؟ ...
سائنسدانوں نے جوان چوہوں کا خون بوڑھے چوہوں کو لگایا تو کیا نتیجہ نکلا؟ انتہائی حیران کن تجربہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) سائنسدانوں نے ایک تحقیق میں کچھ نوجوان چوہوں کا خون بوڑھے چوہوں کو لگایا جس کا انتہائی حیران کن نتیجہ نکلا اور سائنسدانوں نے نوجوان چوہوں کے خون کو ’جوانی کا سرچشمہ‘ قرار دے دیا۔ میل آن لائن کے مطابق جب ان بوڑھے چوہوں کو نوجوان چوہوں کا خون لگایا گیا تو ان کے جسم میں توانائی کی ایک نئی لہر دوڑ گئی اور وہ نوجوان چوہوں کے جیسے پھرتیلے ہو گئے۔ یہی نہیں بلکہ ان بوڑھے چوہوں کی یادداشت اور سیکھنے کی صلاحیتیں بھی کئی گنا بڑھ گئیں۔
سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ”نوجوان چوہوں کے خون میں موجود پروٹینز کی وجہ سے بوڑھے چوہوں کے دماغ کے خلیوں کی تعداد تیزی کے ساتھ بڑھنا شروع ہو گئی اور ان کے عصبی خلیوں کا آپس میں ربط بہت زیادہ بہتر ہو گیا۔ “ سائنسدانوں نے لیبارٹری نے انسانوں پر بھی یہی تجربہ دہرایا اور بالکل یکساں نتائج سامنے آئے۔ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ کیتھلین گین کا کہنا تھا کہ ”اس تحقیق میں ہم نے لوگوں کے لیے ’جوانی کا چشمہ‘ ڈھونڈ لیا ہے۔ نوجوان اور صحت مند لوگوں کا خون لگانے سے بوڑھے لوگوں کو بھی توانا اور دوبارہ سے جوان بنایا جا سکتا ہے۔ اس طریقے سے بوڑھے لوگوں کو رعشے اور الزیمرز جیسی بیماریوں سے بھی محفوظ رکھا جا سکتا ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -