ہلاکتوں میں اضافہ، سمارٹ لاک ڈاؤن سخت کرنے پر غور، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر سے سفارشات طلب، کورونا سے مزید76افراد جان کی بازی ہار گئے

        ہلاکتوں میں اضافہ، سمارٹ لاک ڈاؤن سخت کرنے پر غور، نیشنل کمانڈ اینڈ ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) کورونا کیسز میں اضافے پر وفاقی حکومت نے سمارٹ لاک ڈاؤن سخت کرنے پر غور شروع کر دیاوزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونیوالے اعلیٰ سطح کے اجلاس میں ملک میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کی و جو ہا ت کا تفصیلی جائزہ لیاگیا اور وفاقی حکومت نے کیسز میں تیزی کیساتھ اضافے کے تناظرمیں سمارٹ لاک ڈاؤن میں سختی پر غور شروع کرتے ہوئے اس حوالے سے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر سے سفارشات بھی مانگ لیں۔اجلاس میں متعلقہ وزراء کے علاوہ کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر کے چیئرمین وفاقی وزیر اسد عمر نے بھی شرکت کی۔ پہلے مر حلے میں عوام سے ایک مرتبہ پھر کورونا سے بچاؤ کیلئے ضابطہ اخلاق پر عمل کرنے کی اپیل کی جائیگی اور اگر یہ اپیل کامیاب نہ ہوئی تو دوسرے مرحلے میں ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے سختی بھی کی جائیگی۔ چاروں صوبے اور آزاد کشمیر گلگت بلتستان کی سیاسی قیادت بھی عوام سے ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے درخواست کریگی اور اس سلسلے میں میڈیا پر خصوصی پیغامات نشر اور ٹیلی کاسٹ کئے جائینگے،ملکی سیاسی قیادت کے ذریعے ہی عوام کو ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے رضا مند کیا جائیگا تاکہ جہاں جہاں خلاف ورزی ہورہی ہے وہاں اقدامات اٹھا ئے جائیں۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیاگیا کہ اگر ایس او پیز پر عملدرآمد نہ ہوا تو لاک ڈاؤن سخت کردیا جائیگا اور جن شعبوں کو کھولا گیا ہے ان کی دوبارہ بندش ہوگی۔اجلاس کو بتایا گیا کہ عوام کی جانب سے حفاظتی تدابیر اختیار نہیں کی جارہی جس کی وجہ سے کیسز کی تعداد دوگنی اور اموات کی شرح مسلسل بڑھ رہی ہے،لاک ڈاؤن کو سخت کرکے کورونا وائرس کو روکا جاسکتا ہے۔دریں اثناسندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ پر پابندی ختم ہونے کے بعد کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ بحال ہو گئی لیکن ٹرانسپورٹرز کی جانب سے ایس او پیز پر عملدرآمد مکمل طور پر نہیں ہو رہا۔سند۔ٹرانسپورٹرز کی جانب سے ماسک پہننے کی ہدایت پرعمل کا ملا جلارجحان دیکھنے کو مل رہا ہے جب کہ مسافر بھی بغیر ماسک سفر کرتے نظر آ رہے ہیں۔

لاک ڈاؤن سخت

اسلام آباد،کراچی، لاہور (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں)پاکستان میں بدھ کے روز کورونا سے مزید 76 افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ 5002 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جس سے اموات کی مجموعی تعداد 1729 ہوگئی جب کہ نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 83292 تک پہنچ گئی ہے اب تک سندھ میں 555 اور پنجاب میں کورونا سے 570 افراد انتقال کرچکے ہیں جب کہ خیبر پختونخوا میں 500 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔اس کے علاوہ بلوچستان میں 51، اسلام آباد 34، گلگت بلتستان میں 12 اور آزاد کشمیر میں مہلک وائرس سے 7 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔بروز بدھ ملک بھر سے کورونا کے مزید 5002 کیسز اور 76 ہلاکتیں رپورٹ ہوئیں جن میں سندھ میں 1824 کیسز اور 29 اموات، پنجاب 1639 کیسز 30 ہلاکتیں،خیبر پختونخوا سے 476 کیسز اور 10 ہلاکتیں، اسلام آباد 295 کیسز 4 ہلاکتیں، بلوچستان 710 کیسز اور 2 ہلاکتیں، گلگت بلتستان سے 45 کیسز، آزاد کشمیر سے 13 کیسز اور ایک ہلاکت رپورٹ ہوئی ہے۔بدھ کو پنجاب سے کورونا کے مزید 1639کیسز اور 30 ہلاکتیں سامنے ا?ئی ہیں جس کی تصدیق پی ڈی ایم اے نے کی۔صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے مطابق صوبے میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 29489 اور ہلاکتیں 570 ہوگئی ہیں۔صوبے میں اب تک کورونا سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 7469 ہے۔وفاقی دارالحکومت سے آج کورونا وائرس کے مزید 295کیسز اور 4 ہلاکتیں سامنے آئی ہیں جس کی تصدیق سرکاری پورٹل پر کی گئی ہے۔پورٹل کے مطابق اسلام ا?باد میں کیسز کی مجموعی تعداد 3188 ہوگئی ہے جب کہ اموات 34 ہو چکی ہیں۔اسلام آباد میں اب تک کورونا وائرس سے 399 افراد صحتیاب ہوچکے ہیں۔بلوچستان سے کورونا کیمزید 710 کیسز اور 2 ہلاکتیں سامنے ا?ئیں جس کی تصدیق صوبائی پورٹل پر کی گئی۔صوبائی پورٹل کے مطابق صوبے میں کورونا کے مریضوں کی کل تعداد 5224 ہوگئی ہے جبکہ ہلاکتیں 51 ہوگئی ہیں۔بلوچستان میں کورونا وائرس سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 1733ہوگئی ہے۔آزاد کشمیر میں بھی کورونا کے مزید 13کیسز اور ایک ہلاکت سامنے آئی ہے جس کی تصدیق سرکاری پورٹل پر کی گئی ہے۔حکومتی اعدادو شمار کے مطابق علاقے میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 284 ہوگئی ہے جب کہ علاقے میں اب تک وائرس سے 7 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔سندھ سے بدھ کو کورونا کے مزید 1824 کیسز اور 29 اموات سامنے آئیں جس کی تصدیق محکمہ صحت سندھ کی جانب سے کی گئی۔صوبے میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 32910 ہوگئی ہے جب کہ اموات 555 تک جا پہنچی ہیں۔صوبہ سندھ میں کورونا سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 16022 ہوگئی ہے۔اس کے علاوہ شہر کراچی کورونا سے سب سے زیادہ متاثر ہے جہاں اب تک کورونا کے 26281 کیسز سامنے ا?چکے ہیں جبکہ 555 میں سے 453 اموات صرف کراچی میں ہوئی ہیں۔خیبر پختونخوا میں بدھ کو مزید 10 افراد کورونا وائرس سے جاں بحق ہوگئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 500 تک جا پہنچی ہے

پاکستان ہلاکتیں

لندن، واشنگٹن،پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی)مختلف ممالک میں لاک ڈان میں نرمی کے بعد زندگی معمول پر آنے لگی، پیرس کے کیفے اور ریستوارنوں میں کام شروع ہو گیا۔ برطانیہ کی سب سے چھوٹی کافی شاپ بھی کھل گئی۔ تھائی لینڈ میں بیوٹی سیلون کھولنے کے بعد گاہکوں کو منی ماسک پہنائے گئے، پرتگال میں ڈرائیو ان سینما کھل گیا۔پیرس کی معروف شاہراہ پر 11 ہفتوں کے شٹ ڈاون کے بعد لوگ کھلی فضا میں اپنے من پسند کھانوں سے لطف اندوز ہوئے، ویٹرز نے ماسک پہنے اور گاہکوں نے سماجی فاصلہ برقرار رکھا۔ برطانیہ کی سب سے چھوٹی کافی شاپ بھی کھل گئی جو برٹش جوڑے نے دو ٹیلی فون باکس میں بنا رکھی ہے۔، تھائی لینڈ میں بیوٹی سلیون میں آنے والے گاہکوں کومنی ماسک پہنائے گئے، خواتین نے محفوظ طریقے سے چہرے کی دلکشی میں اضافہ کروایا۔دنیا بھر میں ڈرائیواِن سینما کا رواج بڑھتا جا رہا ہے، پرتگال میں بھی لوگوں نے اپنی اپنی گاڑیوں میں بیٹھ کر من پسند مووی کا لطف اٹھایا۔سعودی عرب نے کرونا وائرس کے 1869 نئے کیسوں کی تصدیق کی ہے جبکہ پہلے سے اس مہلک وَبا کا شکار 1484 مریض صحت یاب ہوگئے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی وزارتِ صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی نے بتایاکہ مملکت میں اب کرونا کے کل کیسوں کی تعداد 89011 ہوگئی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس کے کیسوں کی تعداد میں اضافے کے باوجود گذشتہ ایک ہفتے کے دوران میں 17340 مریض تن درست ہوگئے ہیں اور اب تک کل صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 65790 ہوگئی ہے۔سعودی وزیر صحت ڈاکٹر توفیق الربیعہ کے مطابق اب تک 70 فی صد مریض تن درست ہوچکے ہیں۔ گذشتہ سات روز میں کووِڈ-19 کا شکار 138 مریض وفات پاگئے ہیں اور اب سعودی عرب میں کل اموات کی تعداد 549 ہوگئی ہیطانوی ادارہ برائے قومی شماریات کے حکام کے اعداد وشمارمیں بتایاگیاہے کہ ملک میں کرونا کی وبا سے اب تک 48 ہزار سے زاید افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔میڈیارپورٹس کے انگلینڈ اور ویلز میں کوویڈ 19 وبا سے ہونے والی اموات کی تعداد سات ہفتوں کے دوران اس کی کم ترین سطح پر آگئی ہے جبکہ ہفتے کے روز سے 22 مئی تک اس دوران ہلاکتوں کی تعداد 2589 تھی۔ہفتہ وار بنیادوں پر دفتر کے ذریعہ شائع ہونے والے اعداد و شمار حکومت کی طرف سے جاری کردہ روزانہ ٹول سے مختلف ہیں۔ جو صرف ان معاملات تک محدود ہیں جن کا انفیکشن کے ذریعے ٹیسٹ کیا گیا ہے۔مریکا میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کووڈ انیس کے سبب ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 1,081 رہی جبکہ ملک میں کورونا متاثرین کی کل تعداد 18 لاکھ 32 ہزار کے قریب ہے،اس طرح دنیا میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ اس ملک میں اس وبا کے سبب ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 106,180 تک پہنچ گئی ہے۔بھارت میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد دو لاکھ سے تجاوز کر گئی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ بات بھارتی وزارت صحت کی جانب سے بتائی گئی۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں آٹھ ہزار نو سو نئے کیسز سامنے آئے جس کے بعد کورونا متاثرین کی تعداد دو لاکھ آٹھ ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے۔ اس طرح بھارت کورونا کیسز کے اعتبار سے ساتویں نمبر پر آ گیا ہے۔ بھارتی وزارت صحت کے مطابق وہاں ہلاکتوں کی تعداد 5,815 ہے۔

عالمی ہلاکتیں

مزید :

صفحہ اول -